کارڈیالوجی میں مریض کی ہلاکت‘ لواحقین کی درخواست پر جواب طلب

کارڈیالوجی میں مریض کی ہلاکت‘ لواحقین کی درخواست پر جواب طلب

  



ملتان (وقا ئع نگار) چوہدری پرویز الہی انسٹیٹوٹ آف کارڈیالوجی کے سینئر کارڈیالوجسٹ پروفیسر غریب مریض کو paying کٹیگری میں فائل نہ بنوانے پر بلاضرورت دل کے اپریشن میں تاخیر کرتا رہا۔اور مریض جان کی بازی ہار گیا۔لواحقین کی طرف سے کارووائی کیلئے ہیلتھ کیئر کمیشن۔وزیر اعظم پاکستان۔وزیر اعلی پنجاب۔چیف جسٹس آف پاکستان ودیگر اعلی حکام کو درخواستیں دے دیں۔جبکہ ہیلتھ کیئر کمیشن نے ایگزیکٹو ڈایئریکٹر ایم آئی سی اور پروفیسر حیدر زمان کو پی ایم ڈی سی کی ڈگریوں سمیت طلب کرلیاہے۔ذرائع کے مطابق فرید کوٹ 90/10آر خانیوال کے رہائشی محمد حسین (بقیہ نمبر39صفحہ12پر)

کو ہارٹ اٹیک ہونے پر 12 جون 2019 کو کارڈیالوجی ہسپتال لایا گیا۔اور 17 جون کو انجیو گرافی ہونے پر 3 وال کے بند ہونے کی نشاندہی کی گئی۔مریض کے علاج کرنے والے پروفیسر حیدر زمان نے مریض محمد حسین کے لواحقین کو ایم یو سی کٹیگری سے paying کٹیگری میں فائل بنوانے کا بار بار اصرار کرتے ہوئے 3 لاکھ روپے کا خرچہ بتایا۔لیکن لواحقین نے 3 لاکھ روپے ادا کرنے سے معذرت کی جس پر پروفیسر حیدر زمان نے محمد حسین کے 3 گراف لگانے بذریعہ سرجری کرنے سے انکار کر دیا اور دیگر کنسلٹنٹ بھی پروفیسر حیدر زمان کے مریض کو چیک کرنے کیلئے نہ آئے۔پروفیسر اپنی ذاتی انا کو لیکر مریض کا اپریشن کرنے سے انکاری رہا اور لواحقین مختلف اوقات میں ہسپتال انتظامیہ و دیگر لوگوں سے شکایات و سفارشیں بھی کراتے رہے۔جو بے سود رہیں۔ پروفیسر حیدر زمان نے نہ چاہتے ہوئے 12 جولائی کو محمد حسین کا اپریشن کر کے 3 گراف کی بجائے 2 گراف لگا کر مریض کا نامکمل اپریشن کر دیا مریض زندگی اور موت کی کشمکش میں رہا۔ اور ڈاکٹرز کی طرف سے دوبارہ ری اوپن نہ کرنے پر 21 جولائی 2019 کو زندگی کی بازی ہار گیا جس ہر لواحقین کی طرف سے شکایت کنندہ محمد عمران نے تمام ریکارڈ کے ساتھ ہیلتھ کیئر کمیشن کو پروفیسر کی ذاتی انا اور paying کٹیگری کی فائل نہ بنوانے اور مریض کی جان سے کھیلنے پر درخواست کاروائی کیلئے جمع کراو دی ہے۔ہیلتھ کیئر کمیشن نے ایگزیکٹو ڈائریکٹر اور پروفیسر حیدر زمان کو 2 دسمبر 2019 کو پی ایم ڈی سی کی تمام ڈگریوں سمیت طلب کر لیا ہے۔مزید برآں شکایت کنندہ محمد عمران جو کہ محمد حسین کا بیٹا ہے اس نے صدر پاکستان۔وزیر اعظم پاکستان۔چیف جسٹس آف پاکستان سے بھی پروفیسر حیدر زمان کی مجرمانہ مریض کے ساتھ غفلت پر کارووائی کا مطالبہ کیا ہے۔

انتظامیہ طلب

مزید : ملتان صفحہ آخر