طالبات سے زیادتی کے بعد ان کی فحش ویڈیو بنانے اور بلیک میل کیے جانے کے مقدمے کا عدالت نے تہلکہ خیز فیصلہ سنا دیا

طالبات سے زیادتی کے بعد ان کی فحش ویڈیو بنانے اور بلیک میل کیے جانے کے مقدمے ...
طالبات سے زیادتی کے بعد ان کی فحش ویڈیو بنانے اور بلیک میل کیے جانے کے مقدمے کا عدالت نے تہلکہ خیز فیصلہ سنا دیا

  



سرگودھا (ویب ڈیسک) سرگودھا میں طالبات سے زیادتی کے بعد ان کی ویڈیو بنا کر بلیک میل کرنے والے تین مجرموں کو 104 سال قید کی سزا اور 10 لاکھ روپے جرمانہ عائد کر دیا گیا۔سرگودھا کی انسداد دہشت گردی کی عدالت میں طالبات سے زیادتی کے بعد ان کی فحش ویڈیو بنانے اور بلیک میل کرنے کے مقدمے کی سماعت ہوئی۔پولیس کا بتانا ہے کہ مجرم عدنان جاوید، اظہر بلال اور عاطف رضا کے خلاف 17 نومبر 2017 کو مقدمہ درج کیا گیا تھا جس میں 5 طالبات نے اپنے ساتھ زیادتی اور ویڈیو بنانے کی شکایت درج کروائی تھی۔پولیس کا مزید کہنا تھا کہ مجرموں طالبات سے دوستی کرتے، ان سے زیادتی کرتے اور فحش ویڈیو بناکر بلیک میل کرکے ان سے لاکھوں روپے ہڑپ کر چکے تھے۔پولیس کا کہنا ہے کہ عدالت نے جرم ثابت ہونے پر مجرم عدنان جاوید کو 44 سال قید اور 4 لاکھ روپے جرمانہ جب کہ مجرم اظہر بلال کو 47 سال قید اور ساڑھے 4 لاکھ روپے جرمانہ ادا کرنے کا حکم دیا ہے۔اس کے علاوہ مجرم عاطف رضا کو 13 سال قید اور ڈیڑھ لاکھ روپے جرمانہ ادا کرنے کا حکم دیا گیا ہے۔تینوں مجرم سرگودھا یونیورسٹی کے سابق طالبعلم تھے جنہیں جیل منتقل کر دیا گیا ہے۔

مزید : علاقائی /پنجاب /سرگودھا