اپوزیشن رہبر کمیٹی نے 4 نکاتی چارٹر آف ڈیمانڈ پیش کردیا

اپوزیشن رہبر کمیٹی نے 4 نکاتی چارٹر آف ڈیمانڈ پیش کردیا
اپوزیشن رہبر کمیٹی نے 4 نکاتی چارٹر آف ڈیمانڈ پیش کردیا

  



اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) اپوزیشن رہبر کمیٹی نے حکومت کے سامنے آزادی مارچ کے حوالے سے 4 نکاتی چارٹر آف ڈیمانڈ پیش کردیا ہے۔

حکومت کی مذاکراتی کمیٹی اور اپوزیشن کی رہبر کمیٹی کے مابین آزادی مارچ کے حوالے سے مذاکرات جاری ہیں۔پرویز خٹک کی سربراہی میں حکومت کی 7 رکنی کمیٹی مذاکرات کیلئے اکرم درانی کی رہائش گاہ پر موجود ہے۔ اپوزیشن کی رہبر کمیٹی کی قیادت اکرم درانی کر رہے ہیں جبکہ حکومتی وفد میں اسدقیصر، چوہدری پرویز الہیٰ، شفقت محمود، صادق سنجرانی، پیر نور الحق قادری اور اسد عمر شامل ہیں۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ مذاکرات کے دوران اپوزیشن کمیٹی نے حکومتی وفد کے سامنے 4 رکنی چارٹر آف ڈیمانڈ پیش کردیا ہے۔ اپوزیشن نے وزیر اعظم عمران خان کے استعفیٰ کا مطالبہ کیا ہے۔ اپوزیشن کے مطالبات میں فوج کے بغیر نئے انتخابات کا انعقاد، آئین کی اسلامی دفعات کا تحفظ اور سویلین اداروں کی بالا دستی کا مطالبہ شامل ہے۔ اپوزیشن نے یہ مطالبہ بھی کیا ہے کہ حکومت کی جانب سے آزادی مارچ میں خلل نہ ڈالا جائے۔

مذاکرات سے پہلے حکومتی کمیٹی کے سربراہ پرویز خٹک سے ایک صحافی نے سوال کیا کہ کیا وزیر اعظم کا استعفیٰ جیب میں ڈال کر آئے ہیں؟ جس پر انہوں نے کہا پہلے ہی بتادیا ہے کہ وزیر اعظم کے استعفیٰ پر کوئی بات نہیں ہوگی۔

مزید : قومی