عدالت عظمی نے یوٹیلیٹی سٹور کارپوریشن کو اپنے نام سے تیارکردہ گھی فروخت کرنے سے رو ک لیا

عدالت عظمی نے یوٹیلیٹی سٹور کارپوریشن کو اپنے نام سے تیارکردہ گھی فروخت ...
 عدالت عظمی نے یوٹیلیٹی سٹور کارپوریشن کو اپنے نام سے تیارکردہ گھی فروخت کرنے سے رو ک لیا

  



اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)عدالت عظمی نے یوٹیلیٹی سٹور کارپوریشن کو اپنے نام سے تیارکردہ گھی فروخت کرنے سے روکتے ہوئے قرار دیا ہے کہ یوٹیلیٹی سٹور کے برانڈ سے غیر معیاری گھی کی فروخت توہین عدالت ہوگی۔

جسٹس گلزار احمد کی سربراہی میں جسٹس منیب اختر پر مشتمل دو رکنی بینچ نےیوٹیلیٹی سٹورکارپویشن کے برانڈ گھی پر پابندی کے خلاف دائر درخواست یوٹیلیٹی کارپوریشن کی طرف سے واپس لینے پر مسترد کرتے ہوئے قرار دیا کہ یوٹیلٹی سٹور کارپوریشن اپنے نام سے تیار کردہ  غیر معیاری گھی فروخت نہیں کر سکتا۔دوران سماعت جسٹس منیب اختر نے کہا کہ عدالت نے غیر معیاری گھی فروخت کرنے کے خلاف حکم جاری کیا تھا،یوٹیلیٹی سٹور معیاری گھی فروخت کرے تو عدالت کو کیا اعتراض ہو گا ؟جبکہ یوٹیلٹی سٹور کے وکیل نے موقف اپنایا کہ برانڈ نام سے 2006 سے گھی فروخت کر رہے ہیں،برانڈ کا گھی سستا فروخت کیا جاتا ہے۔جس پر جسٹس گلزار احمد نے کہا کہ ڈالڈا سے کمیشن اور کک بیک نہیں ملتا ہوگا، اس لئے اپنے نام کے برانڈ کاگھی فروخت کیا جارہا ہے۔فاضل جج نے کہا کہ معذرت کیساتھ  کہہ رہا ہوں لیکن یہ حقیقت ہے کہ یوٹیلیٹی سٹور والے لوگوں کی فلاح کا کوئی کام نہیں کرتے،صرف اپنے ملازمین کی فلاح کرتے ہیں۔عدالت نے یوٹیلٹی سٹور کارپوریشن کے موقف کو مسترد کیا تو وکیل نے درخواست گزار کی طرف سے برانڈ نام سے گھی کی فروخت کی اجازت دینے کی درخواست واپس لے لی۔

مزید : علاقائی /اسلام آباد