دھرنے کے خوف نے حکومت کو کنٹینروں اور خندقوں کے پیچھے چھپنے پر مجبور کردیا:سینیٹر مشتاق احمد خان

 دھرنے کے خوف نے حکومت کو کنٹینروں اور خندقوں کے پیچھے چھپنے پر مجبور ...
 دھرنے کے خوف نے حکومت کو کنٹینروں اور خندقوں کے پیچھے چھپنے پر مجبور کردیا:سینیٹر مشتاق احمد خان

  



پشاور(ڈیلی پاکستان آن لائن )امیر جماعت اسلامی خیبر پختونخوا سینیٹر مشتاق احمد خان نے کہا ہے کہ حکومت اپوزیشن کے دھرنے سے بوکھلاہٹ کا شکار ہوگئی ہے، دھرنے کے خوف نے حکومت کو کنٹینروں اور خندقوں کے پیچھے چھپنے پر مجبور کردیا ہے،حکومت کی 14ماہ کی کارکردگی اچھی ہوتی تو اپوزیشن کو دھرنا دینے کی ضرورت نہیں تھی،ایک سال میں حکومت نے خود کو ناکام ترین ثابت کردیا ہے،صدارتی آرڈیننس کے ذریعے فیصلے کرنے ہیں تو پارلیمنٹ کو تالے لگادیں،ڈاکٹروں کی ہڑتال ہسپتالوں کی پرائیوٹائزیشن اور عوام کے حقوق پر ڈاکہ ڈالنے کے خلاف ہے،حکومت پی ایم ڈی سی کی تحلیل کا فیصلہ فوری طور پر واپس لے۔

پشاور میں منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئےسینیٹر مشتاق احمد خان نے کہا کہآر ایچ اے اور ڈی ایچ کی منظوری سے سرکاری ہسپتال میں بھی علاج عوام کی دسترس سے باہر ہوجائے گا،ہم ڈاکٹروں کے احتجاج کی حمایت کرتے ہیں، پاکستان میڈیکل اینڈ ڈینٹل کونسل کو صدارتی آرڈیننس کے ذریعے تحلیل کرنا پارلیمنٹ کی توہین ہے،صدارتی آرڈیننس کے ذریعے فیصلے کرنے ہیں تو پارلیمنٹ کو تالے لگادیں،حکومت تمام اقدامات کے لئے صدارتی آرڈیننس کی آڑ لے رہی ہے، پی ایم ڈی سی کی تحلیل کا فیصلہ کسی صورت قبول نہیں۔انہوں نے کہا کہحکومت نے قرضوں کے ذریعے ملکی معیشت کا بیڑا غرق کردیا،پاکستان کو آئی ایم ایف اور ورلڈ بینک کی غلامی میں دے دیا،ڈالر کی قدر میں اضافہ اور روپے کی قیمت میں مسلسل کمی سے مہنگائی کا سونامی آگیا ہے، آئے روز تیل، گیس، بجلی ، ادویات اور ضروریات زندگی کی قیمتوں میں اضافہ ہورہا ہے جو کہ غریب عوام پر ظلم ہے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت ہوش کے ناخن لے اور غریب عوام پر رحم کرے، جماعت اسلامی حکومت کے اقدامات کو مسترد کرتی ہے۔ جماعت اسلامی حکومت کے ظالمانہ اقدامات کے خلاف اپنے پلیٹ فارم سے جدوجہد کا آغاز کرے گی۔ انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت ناکام ہوچکی ہے۔ ملکی مسائل کا حل صرف اور صرف جماعت اسلامی کے پاس ہے۔ جماعت اسلامی ہی ملک کو اسلامی فلاحی مملکت اور اقبال اور قائد کا پاکستان بنائے گی۔

مزید : علاقائی /خیبرپختون خواہ /پشاور