نریندر مودی جمہوریت اور معیشت دونوں کو نقصان پہنچا رہے ہیں:دی اکانومسٹ

نریندر مودی جمہوریت اور معیشت دونوں کو نقصان پہنچا رہے ہیں:دی اکانومسٹ
نریندر مودی جمہوریت اور معیشت دونوں کو نقصان پہنچا رہے ہیں:دی اکانومسٹ

  



واشنگٹن (این این آئی) امریکی جریدے نے کہا ہے کہ نریندر مودی جمہوریت اور معیشت دونوں کو نقصان پہنچا رہے ہیں,مقبوضہ کشمیر میں کشمیریوں کی گرفتاریاں مظالم، آسام میں ہزاروں مسلمانوں کی بھارتی شہریت ختم کر نا,بھارتی تاریخ میں مسلمانوں کی بد ترین نسل کشی ہے، بدترین صورتحال کے باوجود مغربی تجارتی طبقے کی مودی کی حمایت لمحہ فکریہ ہے۔

تفصیلات کے مطابق امریکی جریدے دی اکانومسٹ نے اپنی ایک رپورٹ میں کہا ہے کہ بھارتی وزیراعظم نریندر مودی جمہوریت اور معیشت دونوں کو نقصان پہنچا رہے ہیں،بھارت میں اس وقت نہ صرف جمہوریت بلکہ معیشت بھی بد سے بدتر ہو رہی ہے۔ جریدے نے کہا ہے کہ مقبوضہ کشمیر میں کشمیریوں کی گرفتاریاں اور مظالم، اس کیساتھ ساتھ آسام میں ہزاروں مسلمانوں کی بھارتی شہریت ختم کر دینا بھارتی تاریخ میں مسلمانوں کی بد ترین نسل کشی ہے۔امریکی جریدے کےمطابق بھارت میں ٹیکس دینے والوں کی شرح بھی خطرناک حدتک کم ہوئی ہے اور یہاں کاروں، موٹرسائیکلوں کی خرید میں بھی 20 فیصد تک کمی ہوئی ہے جبکہ ستمبر کے آخر تک کاروبار میں سرمایہ کاری میں 88 فیصد تک کمی ہوئی۔دی اکانومسٹ نے مودی حکومت کی پالیسیوں پر تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ بھارت میں کچھ بینک اور دیگر قرض دینے والے ادارے بحران کا شکار ہیں، معیشت نا اہل اور برے طریقے سے چلائی جارہی ہے، ایسی صورتحال کے باوجود مغرب کا اکثر تجارتی طبقہ مودی کی حمایت کررہاہے جو لمحہ فکریہ ہے۔

مزید : بین الاقوامی