نمازیں ضائع کرکے میلاد کی محفلیں منعقد کرنے کا کوئی فائدہ نہیں :سجادہ نشین دربار عالیہ چورہ شریف

نمازیں ضائع کرکے میلاد کی محفلیں منعقد کرنے کا کوئی فائدہ نہیں :سجادہ نشین ...
نمازیں ضائع کرکے میلاد کی محفلیں منعقد کرنے کا کوئی فائدہ نہیں :سجادہ نشین دربار عالیہ چورہ شریف

  

اسلام آباد(آئی این پی) سجادہ نشین دربار عالیہ چورہ شریف پیر سید واجد علی شاہ نے کہا ہے کہ بارہ ربیع لاول کا تقاضہ ہے کہ ہم قرآن وسنت پر عمل پیرا ہوں.نمازیں ضائع کرکے میلاد کی محفلیں منعقد کرنے کا کوئی فائدہ نہیں ہے.انہوں نے کہا ہے کہ ہمارے نبی پاک کے بعد ان کے صحابہ میں حضرت ابوبکر رضہ کا مقام سب سے بلند ہے.میلاد میں ان صحابہ کرام کی سیرت سے بہی لوگوں کو آگاہ کیا جائے.اسلام کی تاریخ میں علما اور نعت خواں حضرات نے کبہی بہی پیسے لے کر تقریریں اور نعتیں نہیں پڑہیں اسلئے میلاد کی محفلوں میں ان سے اجتناب کیا جائے.پیر صاحب گزشتہ روز ترلائی میں حضرت سید محمد دوران شاہ رحمت اللہ اور حضرت سید دلبر حسین شاہ رحمت اللہ کے سالانہ عرس کی تقریب سے خطاب کر رہے تہے.تقریب سے سید بابر امیربادشاہ.صاحبزادہ محمد نفیس.خلیفہ محمد ابرارلحق نے بہی خطاب کیا.جب کہ محفل میں صاحبزادہ محمد عثمان شاہ.محمد سعید اور قاری عبدالحمید نقشبندی نے خوب صورت انداز میں نبی پاک کی شان میں نعتیں پیش کیں.پیر سید واجد علی شاہ نے کہا کہ یہ دور فتنوں کا دور ہے.جس نبی پاک نے اپنے مصلے پر متعین کر کےبتا دیا تہا کہ حضرت ابوبکر صدیق کی شان کیا ہے آج انہی کی توہین کی جا رہی ہے.حضرت ابوبکر کی شان تمام صحابہ سے بلند ہے.حضرت علی سمیت تمام صحابہ نے حضرت ابوبکر کی امامت کو تسلیم کیا لیکن آج صحابہ میں تفریق پیدا کی جا رہی ہے.انہوں نے کہا ملک میں جس طرح کے نام نہاد علما پیدا ہو چکے ہیں ان سے امت مسلمہ ٹکڑوں میں تقسیم ہو چکی ہے.پیر سید واجد علی نے کہا کہ پڑوس میں کافر بہی ہے اس کے بہی حقوق ہیں لیکن ہم نبی پاک کی تعلیمات کو بہول چکے ہیں۔

مزید :

علاقائی -اسلام آباد -