سپریم کورٹ کا کراچی کوآپریٹو ہاؤسنگ سوسائٹی کی پارک اراضی سے فوری قبضہ ختم کرنے کا حکم 

سپریم کورٹ کا کراچی کوآپریٹو ہاؤسنگ سوسائٹی کی پارک اراضی سے فوری قبضہ ختم ...
سپریم کورٹ کا کراچی کوآپریٹو ہاؤسنگ سوسائٹی کی پارک اراضی سے فوری قبضہ ختم کرنے کا حکم 

  

کراچی ( ڈیلی پاکستان آن لائن ) سپریم کورٹ رجسٹری کراچی میں کراچی آپریٹو ہاؤسنگ سوسائٹی کی پارک اراضی پر قبضے کے کیس کی سماعت ہوئی ، عدالت نے پارک اراضی سے فوری قبضہ ختم کرنے کا حکم دےد یا۔

سپریم کورٹ رجسٹری میں کراچی کو آپریٹو ہاؤسنگ سوسائٹی میں پارک اراضی پر قبضے کے کیس کی سماعت چیف جسٹس پاکستان جسٹس گلزار احمد نے کی ، عدالت نے کمشنر کراچی اور دیگر حکام سے پیشرفت رپورٹ طلب کرلی ۔دوران سماعت چیف جسٹس پاکستان نے استفسار کیا کہ پی ای سی ایچ ایس کس کے علاقے میں آتا ہے ، چیف جسٹس کے استفسار پر ڈی جی کے ڈی اے لا علم نکلے اور کہا کہ ہمارے علاقے میں نہیں آتا، باقی معلوم نہیں کہ کس کی حدود ہے ۔عدالت نے کے ڈی اے ، کے ایم سی اور دیگر حکام سے رپورٹ طلب کرلی ۔

کے ایم سی رفاعی پلاٹوں پر قبضے سے متعلق کیس میں ایڈمنسٹریٹر کراچی مرتضیٰ وہاب عدالت پیش ہوئے ، عدالت نے ایڈمنسٹریٹر کراچی مرتضیٰ وہاب سے استفسار کیا کہ آپ نے رفاعی پلاٹس خود جا کر دیکھے ؟ ، مرتضیٰ وہاب نے جواب دیا کہ میں خود جا کر نہیں دیکھ سکا ، پیشرفت رپورٹ جمع کرا دی ہے ۔

عدالت نے ریمارکس دیے کہ ایک ماہ ہو گیا ، آپ کو خود جانا چاہئے تھا ، جائیں اور تمام قبضے ختم کرائیں ،دیکھیں کہ رفاعی پلاٹس کی کیا صورتحال ہے ،نیو کراچی سیکٹر فائیو میں کچرا ہی بھرا ہوا ہے ، بچوں کو کچرے پر کھیلتے دیکھا تو حیران رہ گیا ، جعلی لیز اور قبضہ مافیا پر رحم کھانے کی ضرورت نہیں ۔

مزید :

قومی -علاقائی -سندھ -کراچی -