آئندہ 30سال میںٹیکنالوجی کے لحاظ سے دنیا کی سب سے بڑی طاقت بن جائیں گے‘چین

آئندہ 30سال میںٹیکنالوجی کے لحاظ سے دنیا کی سب سے بڑی طاقت بن جائیں گے‘چین

  



بیجنگ(اے پی پی) چین نے کہا ہے کہ وہ آئندہ 30سال میںٹیکنالوجی کے لحاظ سے دنیا کی سب سے بڑی طاقت بن جائے گا۔ چینی حکومت کی طرف سے جاری کردہ اعداد وشمار کے مطابق چین سائنس اور انوومیشن کے سیکٹر ز پر بھرپور توجہ دے کر 2049میں دنیا کی بڑی ٹیکنالوجیکل قوت بننے کا خواہاں ہے ۔ چینی حکمران کمیونسٹ پارٹی کی چائنا سنٹرل کمیٹی اور سٹیٹ کونسل (کابینہ) کی مرتب کردہ دستاویز کے مطابق انہوں نے ملک میں ٹیکنالوجیکل نظام میں اصلاحات کا بیڑا اٹھاتے ہوئے قومی انوومیشن سسٹم پر توجہ مرکوز کر دی ہے ۔ جس پر عمل کرتے ہوئے 2020ءتک چین کو انوویٹیو قوم کے درجے تک پہنچانا مقصود ہے ۔ ذرائع کے مطابق 2049ءمیں چین اپنی آزادی کی صد سالہ سالگرہ منانے گا اور اس نے اس موقع پر مکمل ٹیکنالوجیکل پاور کا درجہ حاصل کرنے کا ہدف مقرر کیا ہے ۔ چین نے ایک پانچ سالہ منصوبے جس کا اعلان 2010ءمیں کیا گیا کے تحت 2015ءتک ریسرچ اور ڈیوپلمنٹ سیکٹر کی ترقی کو اپنے کل جی ڈی پی کے 2.2فیصد مقرر کیا ہے ۔ چینی حکومت بڑی اور درمیانی صنعتی انٹر پرائزرز کیلئے 2011ءسے 2015ءکے دوران ریسرچ اینڈڈیلوپلمنٹ پر قومی آمدنی کا 1.5فیصد خرچ کرے گا۔

مزید : عالمی منظر


loading...