پاکستان اور انڈیا بنکنگ سیکٹر میں باہمی تعاون کو فروغ دیں: یاسر سخی بٹ

پاکستان اور انڈیا بنکنگ سیکٹر میں باہمی تعاون کو فروغ دیں: یاسر سخی بٹ

  



اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستان اور انڈیا نے مالیاتی سیکٹر میں باہمی تعاون کو فروغ دینے کے لئے ایک دوسرے کے ممالک میں بنک برانچیںقائم کرنے کا فیصلہ کیا ہے جو کہ ایک خوش آئند اور مثبت اقدام ہے جس سے دونوں ممالک کے درمیان تجارت کوترقی ملے گی ان خیالات کااظہار اسلام آباد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے صدر یاسر سخی بٹ نے سنگا پور میں بنک آف انڈیا کے چیف ایگزیکٹو اور جنرل منیجر منیر عالم سے میٹنگ کے دوران کیا ہے۔انہوں نے دونوں ممالک پر زور دیتے ہوئے کہا کہ بزنس کمیونٹی کی سہولت کے لئے دونوں ممالک بنک برانچوں کے قیام کے عمل کو تیز کرنے کے ساتھ ساتھ تجارتی والیوم میں موجود صلاحیتوں کے مطابق اضافہ کریں ملاقات میں دونوں ممالک کی تجارت اور سرمایہ کاری کو مستحکم کرکے مثالی تعلقات قائم کرنے پر زور دیا گیا ۔صدر آئی سی سی آئی یاسر سخی بٹ نے کہا کہ پاکستان اور انڈیا قدرتی وسائل سے مالا مال ہیں اور انفراسٹریکچرز، توانائی میں اضافہ اور ٹریڈ اور انڈسٹری کو ترقی دے کر موجود وسائل سے استفادہ کر سکتے ہیں ۔ انہوںنے کہا کہ دونوں ممالک بنک برانچوں کا اجراءکر کے باہمی تجارت کو فوری طور پر 2.7 بلین ڈالر سے بڑھا کر 6.0 بلین ڈالر تک اضافہ کریں اور کہا کہ بنک برانچوں کے قیام سے دونوں ممالک میں تجارتی سرگرمیوں کو ترقی ملے گی ۔اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے بنک آف انڈیا کے چیف ایگزیکٹو اور جنرل منیجر منیر عالم نے کہا کہ ان کے دورہ پاکستان کا مقصد بنک آف انڈیا کی برانچ پاکستان میں قائم کرنا ہے انہوںنے کہا کہ اس وقت انڈیا میں بنک آف انڈیا کی 4000 برانچیں موجود ہیں اور اس وقت بنکنگ سیکٹرز میں بنک آف انڈیا کو ایک اہم مقام حاصل ہے اور مذید یہ بنک نئی نئی سروسز اور سسٹم متعارف کر ا رہا ہے اور کامیابی سے بزنس کر رہا ہے۔

مزید : کامرس