سرکاری سکولوں پر قبضوں،غیر قانونی تعمیرات کی انکوائری کیلئے افسروں کو ڈویژن الاٹ

سرکاری سکولوں پر قبضوں،غیر قانونی تعمیرات کی انکوائری کیلئے افسروں کو ڈویژن ...

  



لاہور (ریحان چوہدری) سیکرٹری سکولز نے پنجاب کے تمام سرکاری سکولوں پر ناجائز قبضوں اور غیر قانونی تعمیرات کی انکوائری کیلئے محکمہ تعلیم کے سینئر افسروں کو ڈویژن الاٹ کردئیے۔ ہر افسر متعلقہ ڈویژن میں سرکاری سکولوں کا سروے کرکے رپورٹ چیف سیکرٹری کو 30 ستمبر سے قبل جمع کروائے گا۔ تفصیلات کے مطابق کچھ روز قبل سپریم کورٹ کے چیف جسٹس افتخار حسین چوہدری نے پنجاب کے سرکاری سکولوں کی حالتِ زار اور قبرستان میں قائم سکولوں پر سوموٹو ایکشن لیتے ہوئے تمام صوبوں کے چیف سیکرٹرز کو ہدایت کی تھی کہ وہ اس بارے میں مکمل رپورٹ سپریم کورٹ کو جمع کروائیں۔ جس پر چیف سیکرٹری پنجاب نے سیکرٹری سکولز اسلم کمبوہ کو اس حوالے سے ہدایت جاری کیں کہ وہ محکمہ تعلیم کے سینئر افسران کو یہ ذمہ د اری سونپیں جس پر سیکرٹری سکولز نے 9 افسران کو مختلف ڈویژن کا سروے کرنے کا حکمد ے دیا۔ نوٹیفکیشن کے مطابق پروگرام ڈائریکٹر ڈی ایس ڈی پنجاب ارشاد کیانی کو لاہور ڈویژن ، ایم ڈی پنجاب ایجوکیشن فاﺅنڈیشن کو فیصل آباد ڈویژن ، ڈی پی آئی سکینڈری ایجوکیشن پنجاب ملک مختار احمد نول کو گوجرانوالہ ڈویژن ، ڈی پی آئی ایلمنٹری ایجوکیشن اسلام صدیق کو سرگودھا ڈویژن ، ایڈیشنل ڈی پی آئی سکینڈری ایجوکیشن سید بلال قمر کو ساہیوال ڈویژن ، ایڈیشنل ڈی پی آئی ایلیمنٹری ایجوکیشن عنایت اللہ جتوئی کو ملتان ڈویژن ، ڈائریکٹر ایڈمن سکینڈری ایجوکیشن یوسف مسیح گل کو ڈی جی خان ڈویژن ، ڈائریکٹر ایڈمن ایلیمنٹری ایجوکیشن مہر مشتاق کو بہاورلپور ڈویژن ، ڈایکٹر بجٹ اینڈ اکاﺅنٹس سکینڈری ایجوکیشن کو راولپنڈی ڈویژن کی ذمہ داری سونپی گئی ہے۔ ان تمام افسران کو ہدایت کی ہے کہ وہ متعلقہ ڈویژن کے ای ڈی او ایجوکیشن کے تعاون سے سرکاری سکولوںپر ناجائز قبضوں کی رپورٹ مرتب کریں۔اس رپورٹ کی روشنی میں سرکاری سکولوں میںناجائز قبضوں اور تجاوزات کو ختم کروایا جائے گااور یہ رپورٹ سیکرٹری سکولز کو جمع کروائیں تاکہ 30 ستمبر سے قبل ایڈووکیٹ جنرل پنجاب کے توسط سے سپریم کورٹ میں جمع کروائی جاسکے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1


loading...