سرکاری ملازمتوں پر عائد پابندی کا خاتمہ خوش آئندہے،ڈاکٹر وسیم اختر

سرکاری ملازمتوں پر عائد پابندی کا خاتمہ خوش آئندہے،ڈاکٹر وسیم اختر

  

 لاہور(پ ر)امیر جماعت اسلامی پنجاب وپارلیمانی لیڈر پنجاب اسمبلی ڈاکٹر سید وسیم اختراور سیکرٹری جنرل نذیر احمد جنجوعہ نے وفاقی حکومت کی جانب سے سرکاری ملازمتوں پر عائد پابندی ختم کرنے کے اعلان کوخوش آئند قراردیتے ہوئے کہاہے کہ اس سے ملک میں جاری بے روزگاری میں کمی ہوگی حکومتی فیصلے سے تعلیم یافتہ اور ہنرمندافراد کے لئے روزگار کے دروازے کھل جائیں گے جوکہ گزشتہ کئی برسوں سے بند پڑے ہوئے تھے ضرورت اس امر کی ہے کہ مستقل روزگار کے لئے مزید نئی آسامیاں پیداکی جائیںملکی سنگین حالات اور بے روزگاری میں مسلسل اضافے کی وجہ سے نوجوان طبقہ بیرون ملک جانے پر مجبور ہے انہوں نے کہاکہ عوامی احتجاج کے دباﺅمیں آکر حکومت وقت نے یہ فیصلہ کیاہے مگریہ دیر آید درست آید کے مترادف اقدام ہے میڈیا رپورٹس کے مطابق اس وقت17لاکھ افراد پنجاب سے،9لاکھ خیبرپختونخواہ،3لاکھ37ہزار سندھ،47ہزار افراد بلوچستان اور قبائلی علاقہ جات سے ایک لاکھ 93ہزار افراد بیرون ممالک میں مقیم ہیںاوورسیز پاکستانیوں کی مجموعی تعداد74لاکھ ہے جن کازیادہ ترحصہ مشرق وسطیٰ،یورپ اور امریکہ میں ہے ہر سال 8ہزار اعلیٰ تعلیم یافتہ افرادپاکستان سے ہجرت کررہے ہیںبدقسمتی سے ہماری افرادی قوت سے دنیافائدہ اٹھارہی ہے ۔ انہوں نے مطالبہ کیاکہ سرکاری اداروں میں بھرتیاں صرف اور صرف میرٹ پر کی جائیں سیاسی وابستگیوں سے بالاتر ہوکر فیصلے ملک وقوم کے لئے مفید ثابت ہوئے سکتے ہیںاقرباءپروری،رشوت خوری اور نااہل افراد کو اہم عہدوں پر فائز کرنے کاسلسلہ بند ہوناچاہئے اس سے جہاں ایک طرف قومی خزانے کونقصان پہنچتا ہے وہاں دوسری طرف اداروں کی کارکردگی کاگراف بھی گرجاتا ہے۔جماعت اسلامی پنجاب کے رہنماﺅں نے مزیدکہاکہ ارکان پارلیمنٹ کوملازمتوں کے کوٹے دینے کی نفی کرنی چاہئے اس سے کرپشن کے نئے دروازے کھلتے ہیں۔روزگار فراہم کرنے سے ملک وقوم کودرپیش آدھے مسائل خوبخود حل ہوجائیں گے۔            جاری کردہ

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -