تحریک انصاف نے سپیکر قومی اسمبلی کے سامنے پیش ہونے سے انکار کردیا

تحریک انصاف نے سپیکر قومی اسمبلی کے سامنے پیش ہونے سے انکار کردیا
تحریک انصاف نے سپیکر قومی اسمبلی کے سامنے پیش ہونے سے انکار کردیا

  

تحریک انصاف نے سپیکر قومی اسمبلی کے سامنے پیش ہونے سے انکار کردیا

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستان تحریک انصاف نے سپیکر کے سامنے استعفوں کی تصدیق کیلئے علیحدہ علیحدہ پیش ہونے سے انکار کردیا جبکہ شاہ محمود قریشی کاکہناتھاکہ سپیکر اگر اراکین کو اکٹھا بلانے کو راضی ہوئے تو وہ پیش ہوجائیں گے ۔

تفصیلات کے مطابق سپیکر قومی اسمبلی سردار ایاز صادق نے استعفوں کی تصدیق کے لیے شاہ محمود قریشی کو جمعرات کو دن گیارہ بجے ، علی محمد خان کو ساڑھے گیارہ اور اسدعمر کو بارہ بجے طلب کیاتھالیکن تینوں اراکین سپیکر کے سامنے پیش نہیں ہوئے ۔

سپیکر قومی اسمبلی سردار ایاز صادق کا کہناتھاکہ وہ اپنی آئینی ذمہ داری پوری کررہے ہیں ، ارکان نہ آئے تو استعفے قبول یا مسترد کرنے کا حق رکھتا ہوںاور وہ اپنے چیمبر میں پی ٹی آئی اراکین کا انتظار کرتے رہے لیکن کوئی پیش نہیں ہواجبکہ جمعہ کو بھی سپیکر نے شیریں مزاری، منزہ حسن اور ڈاکٹرعارف علوی کو طلب کررکھاہے ۔

یادرہے کہ تحریک انصاف نے الگ الگ بلانے کی بجائے اکٹھے بلانے کی خط کے ذریعے درخواست کی تھی جسے سپیکر نے مستردکردیاتھا۔

ناقدین کاکہناہے کہ تحریک انصاف کے کچھ اراکین سے زبردستی استعفیٰ لیاگیااورقیادت کو خدشہ ہے کہ اکیلے پیشی میں وہ سپیکر کے سامنے اپنا موقف بتاسکتے ہیں جس پر اُن کے استعفے منظورنہ کیے جانے کاامکان ہے ۔

مزید :

قومی -