ناکام عاشق کی ’بیمارانہ‘ حرکت

ناکام عاشق کی ’بیمارانہ‘ حرکت
ناکام عاشق کی ’بیمارانہ‘ حرکت

  

لندن (نیوز ڈیسک) برطانوی شہر پریسٹن میں ایک شخص نے سات سال کی عاشقانہ کوششوں میں ناکام ہونے کے بعد بالآخر بدلہ لینے کیلئے اپنے دفتر میں ساتھی خاتون کی پانی کی بوتل میں پیشاب کردیا جس پر اسے گرفتار کرکے جیل بھیج دیا گیا ہے۔ چوالیس سالہ مارک رو 2007ءسے ساتھی خاتون مسز کینڈل کے پیچھے پڑا ہوا تھا۔ وہ اس دفتر میں اسے پیار بھری ای میلز بھیجتا، اسے چھپ چھپ کر دیکھتا، پھول پیش کرتا اور یہاں تک کہ موقع پر کر اس کے گھر کے ارد گرد چکر بھی لگاتا اور اس سے ملنے کی کوشش کرتا۔ خاتون شادی شدہ اور ایک بچی کی ماں ہے اور اس نے مارک کی غیر اخلاقی حرکتوں کو ہمیشہ رد کرنے کی کوشش کی اور اپنے افسران کو اس کی شکایت بھی کی۔ مارک کو جب مسلسل سات سال کی کوشش سے کوئی کامیابی حاصل نہ ہوئی تو وہ شرمناک حرکتوں پر اتر آیا۔ کچھ دن قبل خاتون نے دیکھا کہ اس کی میز پر پڑی پانی کی بوتل میں کچھ مشکوک سا محلول نظر آرہا ہے جس کی افسران کو شکایت کی گئی۔ دفتر میں خفیہ کیمرے لگائے گئے اور یہ راز فاش ہوگیا کہ خاتون کی غیر موجودگی میں مارک اس کی بوتل اٹھا کر واش روم چلا جاتا اور اپنی شیطانی حرکت کرنے کے بعد بوتل واپس رکھ دیتا۔ عدالت نے مارک کی غیر اخلاقی حرکات اور شرمناک رویے پر اسے 18 ہفتوں کیلئے جیل بھیج دیا ہے اور دفتر نے اسے ملازمت سے فارغ کردیا ہے۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -