کالعدم تنظیموں کے کھالیں اکٹھی کرنے پر پابندی کی خلاف ورزی برداشت نہیں کی جائے گی ،شہباز شریف

کالعدم تنظیموں کے کھالیں اکٹھی کرنے پر پابندی کی خلاف ورزی برداشت نہیں کی ...

لاہور(جنرل رپورٹر)وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہبازشریف کی زیرصدارت یہاں اعلی سطح کا اجلاس منعقد ہوا،جس میں عید الاضحی کے موقع پر عوام کی جان و مال کے تحفظ کیلئے کیے جانے والے سکیورٹی انتظامات کا تفصیلی جائزہ لیا گیا۔وزیراعلیٰ محمد شہباز شریف نے عیدالاضحی کے موقع پر صوبہ بھر میں فول پروف سکیورٹی انتظامات یقینی بنانے کیلئے ہدایات جاری کرتے ہوئے کہاکہ قانون نافذکرنے والے ادارے عید الاضحی کے موقع پر امن عامہ کی فضاء برقرار رکھنے کیلئے چوکس رہیں اور عوام کی جان و مال کے تحفظ کیلئے ہر ضروری اقدام اٹھایا جائے۔صوبے کے حساس مقامات کی سکیورٹی کو مزید بہتر کیا جائے۔مساجد، امام بارگاہوں اور عبادت گاہوں کی سکیورٹی یقینی بنانے کیلئے ہر ممکن اقدام اٹھایا جائے۔عید اجتماعات کے باہرواک تھرو گیٹس،میٹل ڈیٹکٹرز اورسکینرز کے ذریعے عوام کے جان ومال کے تحفظ کیلئے سکیورٹی انتظامات کومزید موثر بنایا جائے ۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ پولیس حکام سکیورٹی کے سلسلے میں کئے گئے اقدامات کا جائزہ لینے کیلئے خود فیلڈ میں موجود رہیں اور شرپسند عناصر پر کڑی نظر رکھی جائے۔ وزیراعلیٰ نے ہدایت کی کہ صوبہ بھر میں انٹیلی جنس کی بنیاد پرسرچ آپریشن جاری رکھے جائیں۔وزیراعلیٰ نے پولیس حکام کو ہدایت کی کہ کالعدم تنظیموں کے قربانی کی کھالیں اکٹھی کرنے کی پابندی پر سختی سے عملدرآمدیقینی بنایا جائے اوراس ضمن میں کوئی خلاف ورزی برداشت نہیں کی جائے گی۔انہوں نے کہاکہ کالعدم تنظیموں کی جانب سے کھالیں جمع کرنے پر پابندی یقینی بنانے کیلئے ہر ضلع کی انتظامیہ اور پولیس حکام موثر اقدامات کریں اور پابندی کو ہر قیمت پر یقینی بنایا جائے۔ وزیراعلیٰ نے ہدایت کی کہ مویشی منڈیوں میں بھی سکیورٹی کے جامع انتظامات کیے جائیں۔محکمہ داخلہ کی جانب سے صوبے میں قیام امن کے حوالے سے کیے جانے والے اقدامات کے بارے میں بریفنگ دی گئی۔ صوبائی وزیر قانون رانا ثناء اللہ ،ترجمان پنجاب حکومت زعیم حسین قادری،چیف سیکرٹری،معاون خصوصی رانا مقبول احمد ، انسپکٹر جنرل پویس پنجاب اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کے اعلی حکام نے اجلاس میں شرکت کی۔وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف کی زیر صدارت اعلیٰ سطح کے اجلاس میں زراعت کے شعبہ کی ترقی اور کاشتکاروں کی خوشحالی کے لئے زرعی ریلیف پیکیج پر عملدرآمد کیلئے فوری اقدامات اٹھانے کے سلسلے میں سفارشات کا جائزہ لیا گیا۔وزیراعلیٰ محمد شہبازشریف نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ زراعت کا فروغ او رکاشتکاروں کی فلاح و بہبود مسلم لیگ(ن) کی حکومت کی ترجیحات میں شامل ہے اور زمین سے غلہ اگانے والے کسانوں کی خوشحالی کیلئے زرعی پیکیج ایک سنگ میل کی حیثیت رکھتا ہے جس میں چھوٹے کاشتکاروں کی فلاح وبہبود کیلئے انقلابی اقدامات اٹھائے گئے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ چھوٹے کاشتکاروں کو زرعی پیکیج کے تحت مالی امداد کی ادائیگی جلد سے جلدیقینی بنائی جائے گی۔وزیراعلیٰ نے چھوٹے کاشتکاروں کو مالی امدادکی ادائیگی کیلئے زیر کاشت رقبے پر فصلوں کے سروے کا کام کم سے کم مدت میں مکمل کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے کہاکہ کابینہ کمیٹی شفاف او رمستند سروے کیلئے ہر ممکن ضروری اقدام اٹھائے اور سروے کا کام مقررکردہ مدت کے اندر مکمل ہونا چاہیے۔انہوں نے کہاکہ چھوٹے کاشتکاروں کو مالی امداد کیلئے تقسیم کے طریقہ کار کو بھی جلد حتمی شکل دی جائے اورعید کی تعطیلات کے دوران بھی متعلقہ محکمے کام کر کے ضروری امور نمٹائیں تاکہ چھوٹے کاشت کار کو مالی امداد کی جلد ادائیگی یقینی بنائی جا سکے۔ وزیر اعلی نے کہا کہ چھوٹے کاشتکاروں کو مالی امداد کی تقسیم کے عمل میں تاخیر برداشت نہیں کی جائیگی۔ وزیراعلیٰ نے ایک ٹیکنیکل کمیٹی تشکیل دینے کی ہدایت کرتے ہوئے کہاکہ کمیٹی پنجاب انفارمیشن ٹیکنالوجی بورڈ،اربن یونٹ، سپارکو اور لینڈ ریکارڈ مینجمنٹ انفارمیشن سسٹم کے نمائندوں پر مشتمل ہوگی اوریہ ٹیکنیکل کمیٹی سروے او رمالی امداد کی تقسیم کے حوالے سے کابینہ کمیٹی کی معاونت کرے گی ۔ وزیر اعلی نے کہا کہ چھوٹے کاشتکاروں میں مالی امداد کی تقسیم کے لئے متعلقہ اداروں او رمحکموں کو فعال انداز میں کام کرنا ہے ۔ وزیر اعلی نے کہا کہ سروے کا کام مکمل ہونے کے فوری بعدمالی امداد کی تقسیم کے لئے متعلقہ اضلاع میں زیادہ سے زیادہ ادائیگی سینٹرز بنائے جائیں اور ان ادائیگی سینٹرز پر کسانوں کے لئے ہر طرح کی سہولتیں موجود ہونی چاہییں۔ صوبائی وزراء رانا ثناء اﷲ،ڈاکٹر فرخ جاوید، ڈاکٹر عائشہ غوث پاشا، چیف سیکرٹری ، سینئر ممبر بورڈ آف ریونیو، متعلقہ سیکرٹریز اوراعلیٰ حکام نے اجلاس میں شرکت کی۔

مزید : صفحہ اول


loading...