کیا واقعی عدالت نے ملک ریاض کو گرفتار کرنے کا حکم دے دیا؟ سوشل میڈیا پر خبروں کے بعد اصل حقیقت سامنے آگئی

کیا واقعی عدالت نے ملک ریاض کو گرفتار کرنے کا حکم دے دیا؟ سوشل میڈیا پر خبروں ...
کیا واقعی عدالت نے ملک ریاض کو گرفتار کرنے کا حکم دے دیا؟ سوشل میڈیا پر خبروں کے بعد اصل حقیقت سامنے آگئی

  


رالپنڈی (ڈیلی پاکستان آن لائن) سوشل میڈیا اور مین سٹریم میڈیا پر یہ خبریں زیر گردش ہیں کہ اینٹی کرپشن عدالت نے چیئرمین بحریہ ٹاﺅن ملک ریاض کی عبوری ضمانت مسترد کرتے ہوئے ان کی گرفتاری کا حکم دے دیا ہے لیکن اب ان خبروں کی حقیقت سامنے آگئی ہے۔

چیئرمین بحریہ ٹاﺅن ملک ریاض کی جانب سے اپنے ٹوئٹر اکاﺅنٹ پر عدالتی حکم نامے کی تصویر شیئر کرتے ہوئے کہا ہے کہ کسی عدالت نے ان کی گرفتاری کا حکم نہیں دیا بلکہ ان کی طلبی کا سمن جاری کیا ہے۔

ملک ریاض نے لکھا ’زیادہ ہی پرجوش میڈیا چینلز، عدالتی رپورٹرز اور سوشل میڈیا کے نگرانوں کو یہ بتاتے ہوئے مجھے انتہائی افسوس ہورہا ہے کہ پاکستان کی کسی عدالت نے کسی بھی کیس میں میرے وارنٹ گرفتاری جاری نہیں کیے بلکہ اگلی تاریخ پر حاضری کا سمن جاری کیا ہے۔ اب ہمیں چاہیے کہ ملک کے اس سے بھی زیادہ اہم ایشوز پر فوکس کریں۔‘

خیال رہے کہ اس سے قبل یہ خبریں سامنے آئی تھیں کہ راولپنڈی کی انسداد بد عنوانی کی عدالت نے 1401 کنال اراضی کے مقدمے میں پیش نہ ہونے پر ملک ریاض کے وارنٹ گرفتاری جاری کیے ہیں۔ چیئرمین بحریہ ٹاﺅن کی جانب سے شیئر کیے گئے سمن کے مطابق عدالت نے انہیں 15 اکتوبر کو طلب کیا ہے۔

مزید : رئیل سٹیٹ /علاقائی /پنجاب /راولپنڈی /لاہور


loading...