سپریم کورٹ کا سانحہ آرمی پبلک سکول سے متعلق جوڈیشل کمیشن رپورٹ پبلک کرنے کا حکم 

سپریم کورٹ کا سانحہ آرمی پبلک سکول سے متعلق جوڈیشل کمیشن رپورٹ پبلک کرنے کا ...
سپریم کورٹ کا سانحہ آرمی پبلک سکول سے متعلق جوڈیشل کمیشن رپورٹ پبلک کرنے کا حکم 

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)سپریم کورٹ نے سانحہ آرمی پبلک سکول سے متعلق جوڈیشل کمیشن رپورٹ پبلک کرنے کا حکم دیدیا، اٹارنی جنرل کی رپورٹ پر کمنٹس کو بھی پبلک کرنے کاحکم دیتے ہوئے امان اللہ کنرانی کو عدالتی معاون مقررکردیاگیا، چیف جسٹس گلزاراحمد نے ریمارکس دیتے ہوئے کہاکہ وقت آگیا ہے کہ ہر سانحہ پر کارروائی اوپر سے شروع ہو،شہدا کے والدین کو مطمئن کرنا بھی حکومت کی ذمہ داری ہے ۔

نجی ٹی وی سما نیوز کے مطابق چیف جسٹس گلزاراحمد کی سربراہی میں تین رکنی بنچ نے سانحہ آرمی پبلک سکول سے متعلق ازخودنوٹس کی سماعت کی، سپریم کورٹ نے سانحہ آرمی پبلک سکول سے متعلق جوڈیشل کمیشن رپورٹ پبلک کرنے کا حکم دیدیا، اٹارنی جنرل کی رپورٹ پر کمنٹس کو بھی پبلک کرنے کاحکم دیتے ہوئے امان اللہ کنرانی کو عدالتی معاون مقررکردیا۔

چیف جسٹس گلزاراحمد نے کہاکہ المیہ ہے کہ ہمیشہ چھوٹے چھوٹے ملازمین کیخلاف کارروائی کی جاتی ہے، سانحہ آرمی پبلک سکول کی پیشگی اطلاع کیوں نہیں تھی ؟،غفلت کا مظاہرہ کرنے والے بھی اتنے ہی ذمہ دار ہیں جتنے دہشتگرد، چیف جسٹس پاکستان نے کہاکہ اٹارنی جنرل صاحب اب چھوٹے ملازمین کیخلاف کاررروائی کے روایت ختم کرنا ہو گی ۔

چیف جسٹس گلزاراحمد نے کہاکہ وقت آگیا ہے کہ ہر سانحہ پر کارروائی اوپر سے شروع ہو،شہدا کے والدین کو مطمئن کرنا بھی حکومت کی ذمہ داری ہے ،حکومت یقینی بنائے کہ مستقبل میں اے پی ایس جیساسانحہ نہ ہو سکے ،ازخودنوٹس اتنی آسانی سے نہیں نمٹائیں گے ،عدالت نے کیس کی سماعت ایک ماہ تک ملتوی کردی ۔

مزید :

اہم خبریں -قومی -علاقائی -اسلام آباد -