ٹیکسوں کی بھاری شرح کاروباری شعبہ کیلئے نقصان دہ ہے،وقار میاں 

ٹیکسوں کی بھاری شرح کاروباری شعبہ کیلئے نقصان دہ ہے،وقار میاں 

  

لاہور (سٹی رپورٹر)معروف سماجی رہنما  وقار احمد میاں نے کہا ہے کہ آٹو سپیئر پارٹس بزنس سیکٹر پر ٹیکس کی بھاری شرح لاکھوں تاجروں اور کاروباری حالات کو بند گلی کی طرف لے کر جارہی ہے۔ ڈالر کی قیمتوں کے بے لگام بڑھنے روپے کی قدر میں تیزی سے گرنے کے حالات ملکی معیشت کو بحرانوں کی دلدل میں دھکیل رہے ہیں۔بزنس سیکٹر کو جدید تقاضوں سے آہنگ بزنس فرینڈلی پالیسیز دینے کی ضرورت ہے۔

 صنعت و تجارت اسی صورت آگے بڑھ سکتی ہیں جب ملک میں کاروباری شعبہ ہائے زندگی سے جڑی تاجر برادری کو کاروبار کرنے میں آسان اور سازگار حالات فراہم کئے جائیں۔ ملک وقوم کو بحرانوں اور مصائب کے بھنور سے نکالنے کیلئے ٹیکسوں میں چھوٹ اور سبسڈیز کی پالیسز لائی جائیں۔ سپیئر پارٹس بزنس سیکٹر پر نافذ ٹیکس کی شرح میں کمی کرکے تاجروں کو ریلیف دیا جائے۔ تاجر برادری کو مشکلات سے خلاصی ہی ملکی معیشت کو خود انحصاری کی شاہراہ پر گامزن کرسکتی ہے۔ حکومت جامع اور پائیدار منصوبہ بندی کرکے ملکی معیشت کو تاریکیوں سے نکال کر اجالوں کی طرف لانے کے اسباب پیدا کرے۔ آٹو سپیئر پارٹس بزنس کمیونٹی پر عائد ٹیکسوں کی شرح میں کمی کیلئے معاشی ماہرین زمینی حقائق کے مطابق کٹھن کاروباری حالات کی بہتری کیلئے ریلیف اور سبسڈیز کا اجرا کروائیں۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -