ڈالر کی مسلسل پرواز، 170.90روپے تک پہنچ گیا، سٹیٹ بینک نے مانیٹرنگ سخت کر دی 

  ڈالر کی مسلسل پرواز، 170.90روپے تک پہنچ گیا، سٹیٹ بینک نے مانیٹرنگ سخت کر دی 

  

 کراچی(سٹاف رپورٹر، این این آئی) پاکستانی روپے کے مقابلے ڈالر بے قابو ہو گیا اور ملکی تاریخ میں پہلی مرتبہ ڈالرپاکستانی روپیہ کی قدر  کو گراتا ہوا171روپے  کے قریب پہنچ گیا۔فاریکس ایسوسی ایشن آف پاکستان کی رپورٹ کے مطابق جمعہ کو انٹر بینک میں روپے کے مقابلے ڈالر کی قدر میں 25پیسے کا اضافہ ریکارڈ کیا گیا جس سے ڈالر کی قیمت خرید168.85روپے سے بڑھ کر169.10روپے اور قیمت فروخت168.95روپے سے بڑھ کر169.10روپے ہو گئی اسی طرح مقامی اوپن کرنسی مارکیٹ میں 50پیسے کے اضافے سے ڈالر کی قیمت خرید 170روپے سے بڑھ کر170.50روپے اور قیمت فروخت170.40روپے سے بڑھ کر170.90روپے ہو گئی۔فاریکس رپورٹ کے مطابق یورو کی قدر میں 30پیسے کا اضافہ ہوا جس سے یورو کی قیمت خرید 198.50روپے سے بڑھ کر199.30روپے اور قیمت فروخت200روپے سے بڑھ کر 200.30روپے پر جا پہنچی اسی طرح 50پیسے کے اضافے سے برطانوی پونڈ کی قیمت خرید 232.50روپے سے بڑھ کر233روپے اور قیمت فروخت 234.50روپے سے بڑھ کر235روپے ہو گئی۔دوسری طرف اسٹیٹ بینک نے ڈالر کی مانیٹرنگ سخت کردی، کنزیومر فنانسنگ کی شرائط سخت بھی سخت کردی گئیں۔ 10 کے بجائے اب 5 لاکھ ڈالر کی ادائیگی کرنے سے قبل مرکزی بینک کو آگاہ کرنا ہوگا۔۔اسٹیٹ بینک کی جانب سے بینکوں کو جاری نوٹیفکیشن میں کہا گیا ہے کہ بینک ہر 5 کاروباری دنوں میں ہونے والی متوقع ادائیگیوں کی پیشگی تفصیلات سے روزانہ کی بنیاد پر مرکزی بینک کو آگاہ کریں۔بینکاری ذرائع کے مطابق اس اقدام کا مقصد ڈالر کی طلب پر مانیٹرنگ سخت کرنا ہے، اس کے علاوہ تجارتی خسارے کو لگام دینے اور معشیت میں طلب کا زور کم کرنے کے لیے مرکزی بینک نے کنزیومر فنانسنگ جیسے گاڑی یا پرسنل لون کی شرائط کو بھی سخت کردیا ہے۔مرکزی بینک کے مطابق ایک ہزارسی سی سے زائد پاور کی گاڑیوں کے لیے قرضے کی زیادہ سے زیادہ مدت سات سال سے کم کر کے 5 سال کردی گئی ہے، فی شخص گاڑی کے لیے زیادہ سے زیادہ قرض 30 لاکھ روپے تک لے سکتا ہے۔ ڈاون پیمنٹ 15 کے بجائے 30 فیصد ہوگی۔ نئی شرائط کا اطلاق ملک میں اسیمبل ہونے والی الیکٹرک گاڑیوں پر نہیں ہوگا۔

ڈالر  پرواز

مزید :

صفحہ اول -