پی ٹی آئی بنوں کا چیئرمین تعلیمی بورڈ کو عہدے سے ہٹانے کا مطالبہ

پی ٹی آئی بنوں کا چیئرمین تعلیمی بورڈ کو عہدے سے ہٹانے کا مطالبہ

  

بنوں (نمائندہ خصوصی)پی ٹی آئی بنوں نے بھی چیئرمین تعلیمی بورڈ بنوں کو انکے عہدے سے ہٹانے اور قابل طلباء کو ان کا جائز حق دینے کا مطالبہ کردیا پی ٹی آئی بنوں کے جنرل سیکرٹری وسابق ڈسٹرکٹ کونسلر حاجی وحید خان نے میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ میں حیران ہوں کہ موجودہ چیئرمین تعلیمی بورڈ بنوں گل شرف خان کو کس بنیاد پر بنوں تعلیمی بورڈ کا چیئرمین بنایا گیا ہے کیونکہ اس سے پہلے وہ بطور ڈی ای او کروڑوں روپے کرپشن کے الزامات میں نیب میں پیشیاں بھگت رہے ہیں ہم نے پہلے بھی چیئرمین کے خلاف لیٹر لکھے ہیں اور انکے اختایارت کو چیلنج کرنے کیلئے آر ٹی آئی کے ذریعے ان سے جواب بھی طلب کئے ہیں لیکن چیئرمین بورڈ ٹال مٹول سے کام لے رہے ہیں انہوں نے کہا کہ سب سے بڑی کرپشن یہ ہے کہ سیکرٹری اور کنٹرولر بورڈ کے عہدے بھی انہوں نے اپنے پاس رکھے تھے اسکے علاوہ ٹی اے ڈی میں وہ بڑے پیمانے پر غبن کررہے ہیں ذاتی کام اور میٹنگز کے بھی ٹی اے ڈی وصول کرکے قومی خزانے کا لاکھوں کا نقصان پہنچا رہے ہیں ہمیشہ بنوں ماڈل سکول اینڈ کالج کے طلباء پہلی،دوسری اور تیسری پوزیشن حاصل کرتے ہیں لیکن اس مرتبہ چیئرمین بورڈ نے شروع دن سے ہی بنوں ماڈل سکول کے طلباء کو پریشرائز کیا ارو نتائج میں 1000اور900نمبر لینے والے طلباء کو 700 awr as sy km nmbr diuy اور با الخصوص میٹنگز میں جنوبی اضلاع کے ساتھ تعصبانہ رویہ اختیار کرتے ہیں چیئرمین شپ کیلئے غیر متنازعہ آفسر کو تعینات کیا جاتا ہے جو کہ سب کیلئے قابل قبول ہو انہوں نے وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا،صوبائی وزیر تعلیم،سیکرٹری تعلیم خیبر پختونخوا اور تمام متعلقہ حکام سے مطالبہ کیا کہ بنوں کے طلباء کو تباہی سے بچانے اور بنوں کو مذید بدنامی سے بچانے کیلئے چیئرمین تعلیمی بورڈ کو نہ صرف بنوں سے تبادلہ کیا جائے بلکہ انہیں ہر قسم کے اعلیٰ انتظامی عہدے کیلئے ناہل بھی قرار دیا جائے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -