ملتان روڈ کی صنعتوں کو غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ سے نجات دلائی جائے ‘ پیاف

ملتان روڈ کی صنعتوں کو غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ سے نجات دلائی جائے ‘ پیاف

لاہور(کامرس رپورٹر)پیاف نے وزیر اعلی پنجاب میاں محمد شہباز شریف سے مطالبہ کیا ہے کہ کتار بند ملتان روڈ کی صنعتوں کو غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ ‘ دگر گوں سیوریج اور دھول اڑتی سڑکوں سے نجات دلائیں - ان خیالات کا اظہار پیاف کے چیئرمین ملک طاہر جاوید نے گزشتہ روز یہاںپیاف آفس میں کتار بند روڈ انڈسٹریز ایسوسی ایشن کے ایک وفد سے ملاقات کے دوران کیا ۔ وفد کی قیادت ایسوسی ایشن کے چیئرمین سید محمود غزنوی کر رہے تھے - وفد نے چیئرمین پیاف کو انڈسٹریل ایریا کے مسائل و مشکلات سے آگاہ کیا ۔ انہوں نے بتایا کہ انڈسٹریل ایریا میں فارما سیوٹیکل ‘ ٹیکسٹائل ‘پلاسٹک ‘ملٹی نیشنل اور ایکسپورٹ یونٹ موجود ہیں لیکن مشکلات کی وجہ سے ان کے لیے کام کرنا دشوار ہو چکا ہے ۔ ملک طاہر جاوید نے کہا ہے کہ غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ کی وجہ سے برآمدی آرڈرز کی بر وقت تعمیل و تکمیل نہیں ہو رہی ۔صنعتکار کسی حتمی شیڈول پر کام نہیں کر سکتے ۔

انہوں نے بتایا ہے کہ یورپین ممالک کو برآمدی آرڈرز کی مقررہ وقت پر تعمیل نہ ہونے کی وجہ سے اندیشہ ہے کہ آئندہ آرڈر نہیں مل سکیں گے اور گاہک خطہ کے دوسرے ملکوں کا رخ کرلیں گے ۔ انہوں نے بتایا کہ سیوریج اور سٹرکوں کی خرابی کی وجہ سے قدم قدم پر صنعتکاری میں رکاوٹیں در پیش ہیں ۔ پیاف کے چیئرمین نے کہا کہ جی ایس پی پلس کی سہولت خوش آئند ہے لیکن جب تک صنعتوں کو مسلسل بجلی اور گیس نہیں ملتی‘ پیداواری عمل میں حائل رکاوٹوں کو دور نہیں کیا جاتا جی ایس پی پلس سے پوری طرح فائدہ اٹھایا نہیں جا سکے گا ۔ اس لیے پیاف کے چیئرمین ملک طاہر جاوید نے وزر اعلی پنجاب میاں شہباز شریف پر زور دیا ہے کہ پہلی ترجیح کے طور کتار بند ملتان روڈ کی صنعتوں کو غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ سے نجات دلائی جائے ۔ لیسکو حکام کو ہدایات جاری کی جائیں کہ وہ انڈسٹریر ایسوسی ایشن کے ذمہ داروں کے ساتھ مل بیٹھ کر مینجمنٹ شیڈول بنائے اور اس پر سختی سے عمل کیا جائے - اس کے علاوہ سیوریج اور ٹوٹی سڑکوں کی جلد از جلد تعمیر کی جائے تاکہ علاقہ کے صنعتکاری یکسوئی کے ساتھ اپنی کاروباری سرگرمیاں جاری رکھ سکیں ۔

مزید : کامرس


loading...