سرکاری محکموں میں پارکنگ کا مسئلہ سنگین ملازمین پریشانی میں مبتلا

سرکاری محکموں میں پارکنگ کا مسئلہ سنگین ملازمین پریشانی میں مبتلا ...

             لاہور(محمد نواز سنگرا//انوسٹی گیشن سیل)سرکاری محکموں میں پارکنگ کا مسئلہ سنگین ہوگیا، ملازمین پریشانی کا شکار ہونے لگے۔سول سیکرٹریٹ،بورڈ آف ریونیو،لوکل گورنمنٹ بورڈ،صوبائی الیکشن کمیشن اور دیگر اہم اداروں میں پارکنگ کےلئے جگہ کم پڑ گئی۔ملازمین کو گاڑیاں اور موٹر سائیکلیں کھڑی کرنے کےلئے شدید مشکلات کا سامناہے جبکہ حکومت تاحال پارکنگ کےلئے جگہ بڑھانے اور حفاظتی شیڈ جیسے اقدا مات کرنے میں دلچسپی نہیں لے رہی جس سے ملازمین میں شدید تشویش پائی جا رہی ہے۔پنجاب بھر میں تمام وفاقی اور صوبائی محکموں میںٹرانسپورٹ میں اضافے کے باعث ملازمین کےلئے گاڑیاں اور موٹر سائیکلیں کھڑی کرنے کےلئے جگہ کم پڑنے لگ گئی ہے جس سے پارکنگ سٹینڈوں پر وہیکل کے نقصان کی صورت میں ملازمین کے درمیان تلخ کلامی معمول بن گئی ہے جو کسی بھی وقت بڑے حادثے کا باعث بن سکتی ہے۔لاہور میں موجود تما م سرکاری محکمے جن میں ہائیکورٹ،سول سیکرٹریٹ،لوکل گورنمنٹ بورڈ،بورڈ آف ریونیو،پنجاب الیکشن کمیشن،سمیت تمام اداروں میں پارکنگ کےلئے جگہ کم پڑنے لگی اور گاڑیاں اور موٹر سائیکل کھٹی کرنے کےلئے جگہ نہیں ہے دیگر مسائل کی طرح پارکنگ کا مسئلہ بھی شدت اختیار کرنے لگا جس کےلئے قبل از وقت اقدامات کرنے چاہیں۔ذرائع نے بتایا کہ سرکاری پارکنگ میں پرائیویٹ اداروں کے لوگوں کی بڑی تعداد گاڑیاں پار ک کرتی ہے جس وجہ سے بھی سرکاری ملازمین کو پارکنگ کے حوالے سے مشکلات کا سامنا ہے،اگر ایسے لوگوں کی روک تھام ہو جائے تو بھی پارکنگ کا مسئلہ حل ہو سکتا ہے ۔ایڈیشنل سیکرٹری ویلفئیر نے بتایا کہ نئے تعمیر ہونے والے دفاتر میں وسیع پارکنگ کا انتظام کیا جا رہا ہے جہاں انڈر گروانڈ پارکنگ کےلئے جگہ مختص کی گئی ہے جو بڑے سٹینڈ ہوں گے اور ملازمین کو وہیکل کھڑی کرنے میں دشواری نہیں ہو گی، لیکن پرانے دفاتر میں گاڑیوں اور موٹر سائیکلوں کی بڑھتی تعداد کے پیش نظر جگہ بڑھانے پر غور نہیں کیا جارہا ۔

مزید : میٹروپولیٹن 4


loading...