اداروں کی مضبوطی ہی ملک کو بحرانوں سے نکال سکتی ہے، سیاسی و عسکری ماہرین

اداروں کی مضبوطی ہی ملک کو بحرانوں سے نکال سکتی ہے، سیاسی و عسکری ماہرین

لاہور(محمدنواز سنگرا) ملک میں انصاف نہ ہونے کی وجہ سے ادارے تصادم کا شکار ہیں جس وجہ سے ملک دشمن قوتیں فائدہ اٹھا رہی ہیں ۔لابیوں کی بجائے حکومت اور فوج کو اپنی ذمہ داریاں نبھاتے ہوئے تعصب کا خاتمہ اور مسائل کا حل نکالنا چاہیے۔ان خیالات کا اظہار ملک کے سیاسی اور عسکری ماہرین نے روز نامہ پاکستان سے گفتگو کرتے ہوئے کیا ہے جماعت اسلامی کے رہنما فرید پراچہ نے کہاکہ اداروں میں تعصب سے ملک دشمن قوتیں تقویت پکڑ رہی ہیں۔تصادم کے خاتمے کےلئے پہلی ذمہ داری حکومت کی اور دوسری عسکری قیادت کی ہے جن کو متحد ہو کر تمام اداروں کی مضبوطی کےلئے کام کرنا چاہیے۔سابق وفاقی وزیر نذر محمد گوندل نے کہا اداروں کی صفوں میں اتحاد پیدا کرنا حکومت وقت کی ذمہ داری ہے جس میں وہ ناکام نظر آرہی ہے۔اداروں کی مضبوطی ہی ملک کو بحرانوں سے نکال سکتی ہے ،تما م اداروں اور حکومت کو انتشار کی بجائے متحد ہونا چاہیے۔ جنرل (ر)راحت لطیف نے کہاکہ شکوک و شبہات کی وجہ سے ملک کے اندرونی حالات دن بدن خراب ہو رہے ہیں،جس سے بیرونی قوتیں ناجائز فائدہ اٹھا رہی ہیں۔میرٹ کے نہ ہونے کی وجہ سے لوگوں میں تشویش پائی جاتی ہے جو اداروں میں تصادم کا باعث بنتی ہے۔اندرونی اور بیرونی لابیوں کی وجہ سے ملک انتشار کا شکار ہے وزیر اعظم کو نوٹس لے کر اداروں میں یکجہتی پیدا کر کے پاکستان کو مضبوط بنانا چاہیے۔سابق سر براہ آئی ایس آئی پنجاب برگیڈئیر (ر)اسلم گھمن نے کہاکہ اداروں میں تصادم میں دن بدن اضافہ ہو رہا ہے ۔حکومت کو سب کو ساتھ لے کر چلنا ہو گا ورنہ حالات خراب ہو سکتے ہیں۔ملک میں مسائل کو کنٹرول کرنے کےلئے حکومت اور فوج کا ایل پچ پر ہونا ضروری ہے اور پاکستان دشمن قوتوں کو خبر دار کرنا چاہیے کہ پاکستانی قوم یک سوئی کے ساتھ مشکلات سے نکلنا جانتی ہے۔

سیاسی و عسکری ماہرین

مزید : صفحہ آخر


loading...