ڈیفالٹر کیخلاف آپریشن شروع پولیس ٹریننگ سکول سمیت متعدد سرکاری محکموں کے گیس کنکشن منقطع

ڈیفالٹر کیخلاف آپریشن شروع پولیس ٹریننگ سکول سمیت متعدد سرکاری محکموں کے ...

              لاہور (خبر نگار) ایم ڈی سوئی ناردرن گیس کمپنی محمد عارف حمید کے حکم پر ڈیفالٹرز کے خلاف بڑے پیمانے پر آپریشن شروع کر دیا گیا ہے اور اس میں پہلے مرحلے میں سرکاری محکموں کے ذمے اربوں روپے ریکور کرنے کے لئے باقاعدہ گزشتہ روز سے آپریشن شروع کر دیا گیا ہے اور گیس کمپنی کی ٹیموں نے ڈیفالٹرز کے خلاف آپریشن کے دوران ڈپٹی سپیکرز پنجاب اسمبلی کی سرکاری رہائش گاہ اور پولیس ٹریننگ سکول سمیت متعدد سرکاری محکموں کے گیس کنکشن کاٹ دیئے ہیں جبکہ آئی جی پولیس آفس میں گیس کنکشن کاٹنے کے لئے آنے والی ٹیم کو اہلکاروں نے گیس کنکشن کاٹنے سے روک لیا جس پر گیس کمپنی کی ٹیم اور پولیس اہلکاروں کے درمیان تو تکرار کا منظر بھی پیش آیا ہے۔ اس موقع پر آئی جی پولیس آفس کی انتظامیہ نے گیس حکام سے رابطہ کر کے گیس کے واجب الادا چار لاکھ روپے کی ادائیگی کے لئے دو ماہ کی مہلت حاصل کر لی اس طرح گیس کمپنی کی ٹیم نے ڈی آئی جی پولیس آپریشن کے آفس کا گیس کنکشن چار لاکھ روپے کے ڈیفالٹر ہونے سے منقطع کر دیا ہے جبکہ پولیس ٹریننگ سنٹر واقع فیروز پور روڈ کا گیس کنکشن اڑھائی لاکھ روپے کے ڈیفالٹر ہونے پر منقطع کر دیا ہے اسی طرح گیس کمپنی کی ٹیم نے کوٹ لکھپت جیل کے ذمے28لاکھ روپے واجب الادا ہونے پر گیس کنکشن منقطع کر دیا ہے جبکہ پنجاب یونیورسٹی کے شعبہ کیمسٹری کے ذمے چار لاکھ روپے کا بل واجب الادا ہونے پر گیس کنکشن کاٹ دیا گیا ہے اور ڈپٹی سپیکر پنجاب اسمبلی کی سرکاری رہائش گاہ کے ذمے44 لاکھ روپے کا بل ہونے پر گیس کنکشن منقطع کر دیا ہے۔ اس حوالے سے ڈپٹی سپیکر اسمبلی کے سٹاف افسر کا کہنا ہے کہ گیس کا بل جمع کروا دیا گیا ہے اس کے باوجود گیس کنکشن منقطع کیا گیا ہے جبکہ اس حوالے سے گیس کمپنی کے جی ایم جواد نسیم کا کہنا ہے کہ ڈیفالٹرز کے خلاف بلا امتیاز آپریشن کیا جا رہا ہے اور آج بھی آپریشن کا سلسلہ جاری رہے گا۔

مزید : صفحہ آخر


loading...