حکمران حضرت عمر فاروقؓکی سیرت اپنا کر مسائل حل کریں،حافظ ادریس

حکمران حضرت عمر فاروقؓکی سیرت اپنا کر مسائل حل کریں،حافظ ادریس

لاہور(سٹاف رپورٹر)نائب امیر جماعت اسلامی پاکستان حافظ محمد ادریس نے کہاہے کہ وزیراعلیٰ پنجاب کہتے ہیںکہ حالات درست نہ ہوئے تو خونی انقلاب آئے گا لیکن قوم کو یہ نہیں بتاتے کہ حالات کو درست کرنے کی ذمہ داری کس کی ہے اور حالات کو خراب کس نے کیاہے حالات کو خراب کرنے والے مزدور اور کسان یا عام آدمی نہیں بلکہ یہ حکمرانوں اور بااختیار لوگوں کا کیا دھرا ہے آج اگر عوام غربت کی چکی میں پس رہے ہیںاور انہیں تعلیم ، صحت اور روزگار کی سہولتیں دستیاب نہیں تو یہ حکمرانوں کی نااہلی ہے اور اس کے مجرم وہ مقتدر حلقے ہیں جنہوں نے تمام اختیارات کو اپنے ہاتھ میں لے رکھاہے۔حکمران حضرت عمرفاروق ؓکی سیرت پر عمل کر کے مسائل حل کریں

 اور قومی وسائل پر سانپ بن کر بیٹھے ہوئے ہیں بچوں سمیت نہروں میں چھلانگیں لگانے والی ماﺅں کی خود کشیوں کے بڑھتے ہوئے واقعات ملک میں حالات کی سنگینی اور حکمرانوں سے ان کی ناامیدی اور مایوسی کے آئینہ دار ہیں جب تک حکمران خود کو عوام کے خادم اور اللہ کے ہاں جوابدہ نہیں سمجھیں گے ، حالات میں بہتری نہیں آ سکتی ان خیالات کا اظہار انہوں نے جامع مسجدمنصورہ میں نماز جمعہ کے اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کیاحافظ محمد ادریس نے کہاکہ پاکستان کی بنیاد میں ان لاکھوں شہداکا خون ہے جنہوں نے اپنی جانوں کا نذرانہ دے کر اپنی آنے والی نسلوں کے لیے ایک ایساآزاد خطہ زمین حاصل کیا تھا جہاں وہ قرآن و سنت کے مطابق اپنی زندگیاں گزار سکیں لیکن قائداعظم کی وفات کے فوراً بعد اس ملک کے اقتدار پر انگریز کی پروردہ اشرافیہ نے قبضہ کرلیا اور ملک کے تمام وسائل کو سمیٹ لیا انہوں نے کہاکہ جب تک دولت چند ہاتھوں میں مرتکز رہے گی ، غریب آدمی روٹی کے لقمے کو ترستے اور خود کشیاں کرتے رہیں گے انہوں نے کہاکہ خلیفہ ثانی حضرت عمر فاروق ؓ نے اسلامی فلاحی مملکت کا جو نقشہ پیش کیا تھا دنیا اس کی مثال پیش نہیں کر سکی اگر حکمران صدق دل سے اس طر ز حکمرانی کو اختیار کر لیں تو پاکستان کو گداگری سے ہمیشہ کے لیے نجات مل سکتی ہے اور عوام کے سارے مسائل حل ہو سکتے ہیں حافظ محمدادریس نے کہاکہ لوگوں کے تمام مسائل کا حل قرآن وسنت کے نظام میں ہے، جماعت اسلامی اسی نظام خلافت اور حکومت کے لیے کوشاں اور پاکستان کے عوام کو موجودہ ظالمانہ نظام سے نجات دلانے کے لیے جدوجہد کر رہی ہے ۔انہوں نے بانی جماعت اسلامی سیدابوالاعلیٰ مودودی ؒ ، میاں طفیل محمد ؒ ، قاضی حسین احمد ؒ اور سید منورحسن کی غلبہ اسلام کے لیے کوششوں کو شاندار الفاظ میں خراج تحسین پیش کیا اور کہاکہ نومنتخب امیر سراج الحق بھی اپنے سابقین کے نقش قدم پر چلتے ہوئے ملک میں اسلامی نظام کے نفاذ کی جدوجہد جاری رکھیں گے اور عوام کے حقوق کے تحفظ کے لیے اپنی تمام تر توانائیوں کو بروئے کار لائیں گے ۔

مزید : میٹروپولیٹن 1


loading...