صوابی، گاڑی پر فائرنگ، باپ بیٹے سمیت ایک ہی خاندان کے 7افراد جاں بحق، 8زخمی

صوابی، گاڑی پر فائرنگ، باپ بیٹے سمیت ایک ہی خاندان کے 7افراد جاں بحق، 8زخمی

 صوابی(آئی این پی)صوابی میں گاڑی پر فائرنگ سے ایک ہی خاندان کے سات افراد جاں بحق ہو گئے ،زخمیوں کو تشویشناک حالت میں قریبی ہسپتالوں میں منتقل کر دیا گیا،ہلاکتوں میں اضافے کا خدشہ ظاہر کیا جا رہا ہے،واقعہ کے بعد لواحقین اور علاقہ مکینوں نے لاشیں سڑک پر رکھ کر احتجاج کرتے ہوئے مردان روڈ بلاک کر دی جبکہ وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا نے واقعے کا نوٹس لے کر آئی جی خیبر پختونخواہ سے رپورٹ طلب کر لی۔جمعہ کوپولیس کے مطابق ایک خاندان کے افراد پک اپ گاڑی پر صوابی سے پشاور جا رہے تھے کہ نا معلوم افراد نے تھانہ یار حسین کی حدود میں ان پر اندھا دھند فائرنگ کر دی جس کے نتیجے میں باپ بیٹا سمیت 5 افراد موقع پر ہی جاں بحق جبکہ 8 زخمی ہو گئے۔ امدادی ٹیموں کے اہلکاروں نے جاں بحق اور زخمی ہونے والوں کو صوابی اور مردان کے اسپتالوں میں منتقل کیا جہاں ڈاکٹروں کے مطابق متعدد افراد کی حالت تشویشناک ہونے کے باعث ہلاکتوں میں اضافے کا خدشہ ہے۔دوسری جانب مقتولین کے ورثا نے لاشیں سڑک پر رکھ کر احتجاج کیا جس کے باعث صوابی روڈ پر ٹریفک کی روانی معطل ہو گئی، مظاہرین کا مطالبہ تھا کہ قاتلوں کو فوری طور پر گرفتار کیا جائے۔وزیر اعلی خیبر پختون خوا پرویز خٹک نے واقعہ کا نوٹس لیتے ہوئے آئی جی خیبر پختون خوا ناصر درانی سے رپورٹ طلب کر لی ہے۔ جب کہ پولیس حکام کا کہنا ہے کہ پولیس کے مطابق مقتول ایک نوجوان روزگار کیلئے سعودی عرب روانگی کیلئے پشاور ایئرپورٹ جارہا تھا جبکہ دیگر افراد نوجوان کو پشار ایئرپورٹ چھوڑنے جارہے تھے، ابتدائی تفتیش کے مطابق جاں بحق ہونے والوں کی کسی سے کوئی ذاتی دشمنی نہیں تھی تاہم مکمل تحقیقات کے بعد ہی کوئی حتمی بیان جاری کیا جا سکے گا۔

مزید : صفحہ اول


loading...