تہلکہ مچا دینے والا حیرت انگیر فتویٰ

تہلکہ مچا دینے والا حیرت انگیر فتویٰ

قاہرہ (بیورو رپورٹ)مصر میں ایک ایسا حیرت انگیز فتویٰ سامنے آیا ہے جس کی آج تک تاریخ میں کوئی مثال نہیں ملتی، جس  نے ایک تہلکہ مچا رکھاہے۔فتوے کے مطابق اگر مردوں کو جان کا خطرہ ہو تا وہ اپنی بیویوں کے ساتھ جنسی تعلقات کی اجازت دے سکتے ہیں۔ یہ فتویٰ ایک مصری عالم اور سلفی پارٹی کے نائب صدر یا سر برہانی نے ایک ویب سائٹ پر جاری کیا جس میں کہا گیا ہے کہ کسی شخص کی بیوی سے زیادتی ایسے ہی ہے جیسے صرف دولت لوٹنا، اس طرح کے واقعات میں شوہر اپنی بیوی کا دفاع نہ کرے بلکہ اس کو حملہ آور کے سامنے جھکنے پر مجبور کرے۔ اس فتوے کیخلاف مصر اور سوشل میڈیا میں شدید رد عمل سامنے آیا ہے او رخوب مذمت کی جا رہی ہے یہا ں تک کہ مصری وزارت مذہبی امور کے ایک عہدیدار اصمد محمد علی نے کہا ہے کہ اس فتوے کا اسلامی شریعت یا عام قانون سے دور کا بھی کوئی تعلق نہیں،ان کا کہنا ہے کہ ہر مسلمان کو اپنی عزت کا تحفظ کرنا چاہئے بے شک اسے جیل یا قبر میں ہی کیوں نہ جانا پڑے۔ مسلم دنیا کی معتبر ترین یونیورسٹی الازہر نے بھی اس فتوے کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے۔

مزید : بین الاقوامی


loading...