پانی بحران سے بچنے کیلئے نئے آبی ذخائر کی تعمیر ناگزیر ہو چکی ہے،وسیم اختر

پانی بحران سے بچنے کیلئے نئے آبی ذخائر کی تعمیر ناگزیر ہو چکی ہے،وسیم اختر

  



لاہور(نمائندہ خصوصی) امیر جماعت اسلامی صوبہ پنجاب و پارلیمانی لیڈر صوبائی اسمبلی ڈاکٹر سید وسیم اخترنے وزارت پانی وبجلی کی جانب سے قومی اسمبلی میں پیش کردہ دستاویزات جن میں انکشاف کیاگیا ہے کہ ’’رواں سال پانی کے ذخائرمیں28فیصد تک کمی ہوجائے گی‘‘ پرتشویش کا اظہارکرتے ہوئے کہا ہے کہ ملک بھر میں پینے کے پانی کے ذخائرکم ہورہے ہیں اس ساری صورتحال سے نمٹنے کے لئے آبی ذخائرکی تعمیر فوری طور پر ناگزیر ہوچکی ہے اس کے علاوہ واپڈا موجودہ آبی ذخائرکی استعداد کو بڑھانے کے لئے اپنی حکمت عملی بھی واضح کرے۔انہوں نے کہاکہ پاکستان میں آبی ذخائر کی کمی کے باعث ہمارے کھیت ویران اورزراعت تباہ ہورہی ہے اور ہماری لائف لائن قیمتی پانی کا بڑے پیمانے پر ضیاع ہو رہا ہے ۔ اگرماضی میں حکمرانوں نے سنجیدگی کامظاہرہ کیا ہوتا تو آج صورتحال مختلف ہوتی مگربدقسمتی سے ماضی کے برسر اقتدار لوگوں نے اس جانب توجہ دی اور نہ ہی موجودہ حکومت وقت کی ٹھوس منصوبہ بندی دیکھنے میں آرہی ہے۔ضرورت اس امر کی ہے کہ ملک میں کالاباغ ڈیم سمیت تمام چھوٹے بڑے ڈیم کئے جائیں۔

مزید : میٹروپولیٹن 1


loading...