پہلی امریکی سیاہ فام خاتون اٹارنی جنرل پیر کو حلف اٹھائیں گی

پہلی امریکی سیاہ فام خاتون اٹارنی جنرل پیر کو حلف اٹھائیں گی

  



واشنگٹن(اظہرزمان،بیوروچیف) امریکہ کی تاریخ میں پہلی بار ایک سیاہ فام خاتون لوریٹا لینچ پیر کو وائٹ ہاؤس میں اٹارنی جنرل کی حیثیت میں حلف اٹھائیں گی۔55سالہ لوریٹا کی نامزدگی کی سینیٹ نے 5ماہ کے صبر آزما انتظار کے بعد 43 کے مقابلے پر 56ووٹوں سے منظوری دی۔ چھ سال تک اس عہدے پر کام کرنے والے ایرک ہولڈر فارغ ہو گئے ہیں۔ اٹارنی جنرل صدر کی کابینہ کارکن اور امیگریشن سمیت انصاف کے اہم محکمے کا سربراہ ہوتاہے۔صدراوبامہ نے سینیٹ کے فیصلے کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہا کہ لینچ کے عہدہ سنبھالنے کے بعد امریکی صورتحال بہتر ہو جائے گی اور اس کی قیادت میں ہر امریکی اپنے آپ کو زیادہ محفوظ محسوس کرے گا۔ صدر اوبامہ نے لوریٹا لینچ کو نومبر میں اس عہدے کے لئے نامزد کیا تھا لیکن یہ عہدہ سنبھالنے کے لئے امریکی قانون کے مطابق سینیٹ کی توثیق ضروری ہے۔ ایک تو سینیٹ میں اوبامہ مخالف ری پبلکن پارٹی کی مجموعی اکثریت ہے اور دوسری طرف اٹارنی جنرل کا عہدہ کانگریس کے لئے بہت اہم ہے کیونکہ اسے وائٹ ہاؤس کے انتظامی احکامات کا دفاع کرنا ہوتا ہے جس کا کانگریس کے ساتھ تنازعہ چل رہا ہے۔ بالآخر چندری پبلکن ارکان کی حمایت حاصل ہونے سے پانچ ماہ بعد اسے توثیق مل گئی ۔

مزید : صفحہ اول