قطریوں نے لندن کیسے خریدا ؟دلچسپ کہانی جو آپ کے ہوش اڑا دے گی

قطریوں نے لندن کیسے خریدا ؟دلچسپ کہانی جو آپ کے ہوش اڑا دے گی
قطریوں نے لندن کیسے خریدا ؟دلچسپ کہانی جو آپ کے ہوش اڑا دے گی

  



لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) بیرون ممالک میں جائیدادیں بنانا اور اپنے کاروبار بڑھانا پاکستانی سیاستدانوں کا شیوہ ہی نہیں۔ اس لت میں کئی ممالک کے حکمران لتھڑے ہوئے ہیں جن میں اکثریت مسلم ممالک کے حکمرانوں کی ہے۔ آج ہم آپ کو قطر کے شاہی خاندان کے بارے میں بتائیں گے کہ کس طرح وہ برطانیہ میں جائیداد خرید رہا ہے اور شیئرز کی شکل میں سرمایہ کاری کر رہا ہے۔ گزشتہ ہفتے قطر کے شاہی خاندان کی کمپنی کنسٹیلیشن گروپ نے لندن کے برکلے ہوٹل سمیت کئی قیمتی اثاثوں کی مالک کمپنی میں حیران کن سرمایہ کاری کی ہے۔الیکشن کمیشن کا انوکھا کارنامہ 17ووٹرز کیلئے حلقہ بنا دیا

یہ تازہ ترین سرمایہ کاری ہے جو قطر کے شاہی خاندان نے کسی برطانوی کمپنی میں کی۔ حالانکہ شاہی خاندان گزشتہ 8سال سے رازداری کے ساتھ بڑے پیمانے پر برطانیہ میں سرمایہ کاری کر رہا ہے۔ اس ساری سرمایہ کاری کا مقصد برطانوی اسٹیبلشمنٹ سے تعلقات استوار کرنا بتایا جاتا ہے۔ ایک اندازے کے مطابق برطانیہ میں قطری شاہی خاندان 740ملین پاﺅنڈ کی جائیداد رکھتا ہے۔ اس کے علاوہ 11.5بلین پاﺅنڈ کے دیگر اثاثے بھی ہیں۔ پچھلے ہفتے قطری ویلتھ فنڈ نے ”کینرے وارف“ میں 2.6بلین پاﺅنڈ کی سرمایہ کاری کی ہے۔ تیل پیدا کرنے والا ملک قطر گزشتہ سال برطانوی رائل اسکاٹ کا سب سے بڑا سپانسر بن چکا ہے۔ قطرکی حکومت پر اسلامی شدت پسندوں کی مالی مدد اور 2022کا کرکٹ ورلڈ کپ قطر میں کروانے کے لیے آئی سی سی حکام کو رشوت دینے کے الزامات بھی لگائے گئے ہیں، اگرچہ انہوں نے ان الزامات کی تردید کر دی ہے۔ اس کے علاوہ قطری حکمران لندن کے علاقے کارن وال ٹیرس میں تین عالیشان عمارتیں بھی 200ملین پاﺅنڈمیں خرید کر انہیں ایک مینشن کی شکل دے چکے ہیں۔قطر کے امیر کے بھائی نے یہ مینشن 2009میں خریدا تھا۔شاندار پارٹیوں میں میزبان اور مہمانوں کی خدمت پر مامور اس مینشن کا عملہ سفید ٹائی پہنتا ہے۔ برطانیہ کا سب سے مہنگا یہ مینشن اس قدر عالیشان ہے کہ اسے دیکھ کر ملکہ برطانیہ کو بھی کہنا پڑا کہ ”اس عمارت کے سامنے بکھنگم پیلیس خوبصورتی بھی ماند دکھائی دیتی ہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس


loading...