آئندہ بجٹ میں ضرورت کی بنیاد پر وسائل کی تقسیم کو یقینی بنایا جائے: سردار حسین بابک

آئندہ بجٹ میں ضرورت کی بنیاد پر وسائل کی تقسیم کو یقینی بنایا جائے: سردار ...

  

پشاور(سٹی رپورٹر) اے این پی کے صوبائی جنرل سیکرٹری و ڈپٹی اپوزیشن لیڈر سردار حسین بابک نے کہاہے کہ صوبائی حکومت آئندہ صوبائی بجٹ میں ضروریات اور پسماندگی کو مدنظر رکھتے ہوئے وسائل کی تقسیم کو یقینی بنائے۔ پچھلے سات سالوں سے برسراقتدار جماعت نے صوبے کے پسماندہ اور ضرورت مند علاقوں کو یکسر نظر انداز کیا ہے جو سراسر ناانصافی اور ظلم ہے۔سڑکیں کھنڈرات کا منظر پیش کررہی ہے، آمدورفت کے قابل نہیں رہے۔ حکومت سیاسی اور ذاتی بنیادوں پر وسائل کی تقسیم سے گریز کریں۔ سردارحسین بابک نے کہا کہ حکومت تمام محکموں کے وساطت سے تمام اضلاع اور علاقوں سے ضرورت اور پسماندگی کی بنیاد پر بجٹ میں سکیمیں شامل کریں۔ موجودہ حکومت نے اپوزیشن اراکین کو دیوار سے لگادیا ہے اور انہیں ترقیاتی عمل میں شامل نہیں کیا جارہا۔ ہماراصوبہ وسائل اور ذرائع آمدن کے اعتبار سے مالدار صوبہ ہے لیکن بدقسمتی سے ہمیں اپنے وسائل اور ذرائع آمدن کا آئینی حصہ نہیں دیا جارہا۔ انہوں نے کہا کہ آئندہ بجٹ میں ذاتی اور سیاسی بنیادوں پر تقسیم کو یکسر مسترد کریں گے، تبدیلی سرکار کی حکومت میں عوام اپنی مدد آپ کے تحت ترقیاتی کام شروع کرنے پر مجبور ہوگئے ہیں۔ عوام ممبران اسمبلی سے گلے شکوے کررہے ہیں اور حکومت ناانصافی پر اترآئی ہے۔ موجودہ حکومت میں احتجاج کے وہ راستے اپنائے گئے جو صوبے کی تاریخ میں کبھی نہیں اپنائے گئے تھے، مگر اسکے باوجود حکومت ٹھس سے مس نہیں ہورہی۔اپوزیشن کا ہر رکن اس موجودہ حکومت کی ناانصافی کے خلاف عدالت گیا ہے، صوبے کی تاریخ میں پہلی بار متحدہ اپوزیشن نے وزیراعلیٰ کے دفتر کے سامنے اپنے حقوق اور وسائل کی تقسیم کیلئے پرامن احتجاج کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ کورونا وبا کی وجہ سے اپوزیشن نے اپنا احتجاج ختم کردیا ہے ورنہ حالات نارمل ہوتے ہی اپوزیشن اس صوبے کے وسائل اور ذرائع آمدن کو ناانصافی کی بنیاد پر تقسیم نہیں ہونے دے گی

مزید :

پشاورصفحہ آخر -