نیب ترمیمی آرڈیننس ختم، تاجروں اور بیورو کریسی کیخلاف کارروائی کے پرانے اختیارات بحال

  نیب ترمیمی آرڈیننس ختم، تاجروں اور بیورو کریسی کیخلاف کارروائی کے پرانے ...

  

اسلام آباد (این این آئی،مانیٹرنگ ڈیسک)نیب ترمیمی آرڈیننس 2019 کی مدت ختم ہوجانے پر قومی احتساب بیوروکے تاجروں اور بیوروکریسی کے خلاف کارروائی کے پرانے اختیار ات بحال ہو گئے۔ تفصیلات کے مطابق نیب ترمیمی آرڈیننس کے ذریعے نیب کے نجی شخصیات کے خلاف کارروائی کا اختیار ختم کر دیا گیا تھا،سرکاری ملازم یا عوامی عہدیدار کے خلاف پچاس کروڑ سے زاہد کی کرپشن پر کارروائی سکروٹنی کمیٹی سے مشروط کر دی گئی تھی،ترمیمی آرڈیننس میں آمدن سے زاہد اثاثے ثابت کرنے کا بوجھ نیب پر ڈال دیا گیا تھا،نیب ترمیمی آرڈیننس میں سرکاری ملازمین کے محکمانہ غلطی پر نیب کا کارروائی کا اختیار ختم کر دیا گیا تھا،سرکاری ملازمین کی جائیداد منجمد کرنے کا نیب کا اختیار ختم ہو گیا تھا،ٹیکس اور سٹاک ایکسچینج سے متعلق معاملات میں بھی نیب کے دائرہ اختیار سے ختم ہوگئے تھے۔حکومت اپوزیشن میں نیب آرڈیننس کو باقاعدہ قانون میں بدلنے پر پیش رفت نہ ہونے پر آرڈیننس غیر موثر ہو گیا۔دوسری جانب ذرائع وزارت قانو ن کے مطابق حکومت کی جانب سے غیر موثر نیب آرڈیننس کو پارلیمنٹ میں توسیع کیلئے پیش کرنے کے بجائے نیا نیب آرڈیننس لاینے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ذرائع کے مطابق نیب کے نئے ترمیمی آرڈیننس پر کام شروع کر دیا گیا۔

نیب آرڈیننس

مزید :

صفحہ اول -