کرونا کے بعدغریبوں پرمہنگائی کا حملہ،انتظامیہ پھر لاپتہ

      کرونا کے بعدغریبوں پرمہنگائی کا حملہ،انتظامیہ پھر لاپتہ

  

ملتان(نیوز رپورٹر) ضلعی انتظامیہ کی عدم توجہی، پرائس کنٹرول مجسٹریٹس کے غیر فعال ہونے کے باعث گرانفروش مافیا نے رمضان المبارک کے آغاز سے ہی پھلوں اور دیگر اشیاء کے نرخوں میں خود ساختہ اضافہ کرکے غریب اور متوسط طبقے کے روزہ داروں کو ان نعمتوں سے محروم رکھنے کی کوئی کسر نہیں چھوڑی صرف ایک دن کے وقفہ کے دوران پھلوں کی قیمتوں میں 100 فیصد سے بھی زائد کے اضافہ ہونے پر بھی ضلعی انتظا میہ کے کانوں تک جوں تک نہیں رینگی اور(بقیہ نمبر14صفحہ6پر)

گرانفروش مافیا کو صارفین کی جیبوں پر ڈاکہ مارنے کی کھلی چھٹی دے دی گئی ہے۔ ماہ رمضان کی آمد کے ساتھ ہی شہر میں مہنگائی کا نیا طوفان آگیا ہے۔ رمضان المبارک سے چند روز قبل فروخت ہونے والے پھلوں کی قیمتوں میں خود ساختہ اضافہ پر صارفین کی قوت خرید جواب دے گئی ہے۔ بتایا گیا ہے کہ کھجور جو کہ ماہ رمضان سے قبل 220 روپے کلو کی سطح پر بک رہی تھی اب اس کی قیمت 500 روپے کلو کی بلند ترین سطح کو چھونے لگی ہے۔کیلا جو کہ 70 روپے درجن میں دستیاب تھا ماہ رمضان کے آتے ہی اس کی بھی قیمت کو پر لگ گئے اور اب کیلا 150 روپے درجن میں فروخت کیا جارہا ہے۔ خربوزہ کی قیمت 60 روپے سے بڑھ کر 120 روپیکلو،سیب کی قیمت 120 روپے سے بڑھ کر180روپے کلو، لوکاٹ 250 سے بڑھ کر 350روپے،تربوز 40 روپے سے بڑھ کر 60 روپے،امرود 120 روپے سے بڑھ کر 200 روپے کلو،مسمی 60 روپے سے بڑھ کر 80 روپے اور سٹابری 100 روپے سے بڑھ کر 150 روپے کلو ہوگئی ہے۔صارفین نے پھلوں کی قیمتوں میں حالیہ 100 فیصد سے بھی زائد اضافے پر شدید احتجاج کیا اور سوال کیا کہ ضلعی انتظامیہ کہاں ہے؟ پرائس کنٹرول مجسٹریٹس اپنے دفتر سے باہر نکل کر گراں فروشوں کے خلاف کارروائی کیوں نہیں کر رہے دکانداروں کو خود ساختہ مہنگائی کی اجازت کس نے دی ہے؟ جو دن دیہاڑے شہریوں کی جیبوں پر ڈاکہ ڈال رہے ہیں اور رمضان سیزن کے نام پر لوٹ مار جاری ہے۔شہری حلقوں نے حکومت پنجاب سے اس صورتحال کا سنجیدگی سے نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے اور کہا ہے کہ ذخیرہ اندوز دکاندار وار،آڑھتیوں اور بیوپاریوں کے خلاف مقدمات درج کرکے مہنگائی کو ختم کیا جائے اور پھلوں کی قیمتوں کو معمول پر لایا جائے۔اس حوالے سے جب ضلعی حکام سے رابطہ کیا گیا تو انہوں نے کہا کہ گراں فروشی کے خلاف کارروائیاں جاری ہیں جس شہری کو بھی مہنگائی کے حوالے سے شکایت ہو تو وہ حکام کے نوٹس میں لائیں اور نشاندہی کریں اس پر فوری کاروائی عمل میں لائی جائے گی۔

لاپتہ

مزید :

ملتان صفحہ آخر -