ایسا کوئی ثبوت نہیں ملا صحتیاب ہونے والا دوبارہ انفیکشن کا شکار نہیں ہوسکتا، عالمی ادارہ صحت

ایسا کوئی ثبوت نہیں ملا صحتیاب ہونے والا دوبارہ انفیکشن کا شکار نہیں ...

  

نیویارک (این این آئی)عالمی ادارہ صحت (ڈبلیو ایچ او) نے خبردار کیا کہ اس بات کا کوئی ثبوت نہیں ملا کہ جو لوگ کورونا وائرس سے متاثرہ ہو کر صحتیاب ہوگئے ہیں وہ دوبارہ وائرس کی لپیٹ میں نہیں آسکتے۔اس ضمن میں ڈبلیو ایچ ایو نے اعلامیہ جاری کیا کہ فی الحال اس بات کا کوئی ثبوت نہیں ہے کہ جو لوگ وائرس سے صحتیاب ہوئے اور ان کے جسم میں موجود اینٹی باڈیز انہیں دوبارہ انفیکشن سے بچا سکتے ہیں۔اعلامیے میں کہا گیا کہ 24 اپریل 2020 تک کسی تحقیق میں یہ جائزہ نہیں لیا گیا کہ سارس اور کورونا وائرس کے اینٹی باڈیز کی موجودگی انسانوں میں اس وائرس کے نتیجے میں ہونے والے انفیکشن سے استثنیٰ دیتی ہے۔واضح رہے متعدد حکومتیں معاشی سرگرمیوں کو دوبارہ بحال کرنے کی نیت سے اس تجویز پر غور کررہی ہیں کہ صحتیاب ہونے والے کورونا وائرس کے مریضوں کو تصدیق شدہ دستاویزات دے دیے جائیں کہ ان کے جس میں وافر مقدار میں ایٹنی بوڈیز موجود ہیں اور وہ وائرس سے قطعی طور پر محفوظ ہیں۔اس ضمن میں ڈبلیو ایچ او نے خبردار کیا کہ ایسی کوئی سائنسی تحقیق نہیں جس کی بنیاد پر کہا جائے کہ جسم میں وافر مقدار میں اینٹی بوڈیز کی موجودگی پر شہریوں کو ’تمام رسک سے محفوظ‘ قرار دے دیا جائے۔

عالمی ادارہ صحت

مزید :

صفحہ اول -