سعودی عرب، ہزاروں پاکستانی مزدور غذائی قلت کا شکار ہو کر رہ گئے 

سعودی عرب، ہزاروں پاکستانی مزدور غذائی قلت کا شکار ہو کر رہ گئے 

  

جندول(نمائندہ پاکستان) جندول سب ڈویژن سمیت لوئر دیر اور دیر بالا کی ہزراوں مزدور لوگ کوسعودی عراب کے مختلف شہروں خوراک کے شدید قلت کا انکشاف ہوا ہے علاقہ جندول سیمت دیگر شہروں سے سنکڑوں لوگ لیبر ویزوں پر سعودی عرب گئی ہیں جہاں ان پر ویزہ،اقامہ سمیت رہائیشی مکانوں کا کریہ بھی باقی تھا جو کرونا وئرس نے لپٹ میں لے لیا۔زرئع کے مطابق جندول،لوئر،میدان،برول،سمیت ملا کنڈ ڈویژ کے ہزاروں لوگ سعودی عراب کے مختلف شہروں میں کرایہ کے مکانوں میں محصور ہے جس کو باہر جانے پر شدید پابندی لگانے کا سامنا ہے اور پیٹ پالنے کیلئے انکے ساتھ کوئی وسیلہ معیسر نہیں عالاقائی لوگوں کے مطابق انکے  بچے اور رشتہ دار سعودی عراب میں مزدوری کے خاطر مقیم ہے جو اج کل شدید مشکلات سے دوچار ہے انہونے کہا کہ وزیر عظم  کے معون خصوصی زلفی بخاری  کے تمام بیانات صرف میڈیا تک محدود ہے انہونے کہا کہ زلفی بخاری نے ان مزدوروں کے بات چیت کیا ہے جو سرکاری کمپنیوں کے ساتھ کام کرتے ہے جبکہ دیگر ہزروں مزدور بے یاروں مددگار ہے اور پاکستانی سفارت خانے کا کوئی رول وغیرہ نظر نہیں ارہا ہے مقامی لوگوں نے حکومت وقت سے مطالبہ کیا کہ جلد از جلد سعودی عرب حکومت سے مزدوروں کو سعودی عراب میں میقیم ہزروں پاکستانیوں کو رلیف دینے کی ہمددردانا اپیل کریں تکہ مزدوروں کو سہولیات میسر ہوں  

مزید :

صفحہ اول -