سندھ میں کتنے بچے کورونا وائرس کا شکار ہیں؟ صوبائی حکومت نے افسوسناک اعدادوشمار جاری کردیے

سندھ میں کتنے بچے کورونا وائرس کا شکار ہیں؟ صوبائی حکومت نے افسوسناک ...
سندھ میں کتنے بچے کورونا وائرس کا شکار ہیں؟ صوبائی حکومت نے افسوسناک اعدادوشمار جاری کردیے

  

کراچی(ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان میں کورونا وائرس کے کیسز کی تعدامیں تیزی سے اضافہ ہورہا ہے۔حکومتی حلقے مئی کے چار ہفتوں کو انتہائی خطرناک قرار دیتے ہوئے احتیاط کی تلقین کررہے ہیں۔

ڈان نیوزکے مطابق آج ایک دن میں سندھ میں ریکارڈ 383کیسز سامنے آئے ہیں۔ جبکہ کوروناوائرس کے بچوں میں منتقل ہونے کی بات کی جائے تو  سندھ میں 182بچے اس موذی مرض میں مبتلا ہیں۔

بی بی سی کے مطابق ترجمان سندھ حکومت بیرسٹر مرتضی وہاب کا کہنا ہے کہ لاک ڈاؤن سے متعلق لوگوں کی متضاد اور مختلف آرا ہیں ’کوئی اسمارٹ لاک ڈاؤن کی بات کرتا ہے تو کوئی لاک ڈاؤن کو ہی غلط قراردیتا ہے۔‘

ان کا کہنا تھا کہ سندھ میں دس سال سے کم کے 182 بچے کورونا وائرس کے مرض میں مبتلا ہیں جبکہ 60 سال سے زائد عمر کے 900 افراد میں کوورنا وائرس کی تصدیق ہوئی ہے۔

بیرسٹر مرتضی وہاب کا کہنا تھا حکومت بار بار شہریوں کو گھروں پر رہنے اور آئیسولیشن کی تلقین کررہی ہے۔ ان کا کہنا تھا ’خدارا حکومت کی جانب سے لاک ڈاؤن پر عملدرآمد کرکے اپنی نسلوں کو محفوظ کریں۔‘

 خیال رہے پاکستان میں کورونا وائرس سے متاثرہ افراد کی تعداد 12 ہزار سے بڑھ گئی ہے اور 5378 متاثرین کے ساتھ پنجاب سب سے زیادہ متاثرہ صوبہ ہے۔ملک میں جاں بحق افراد کی تعداد 269 ہے جبکہ 2866 افراد صحت یاب بھی ہوئے ہیں۔اموات کے اعتبار سے خیبر پختونخوا بدستور سب سے زیادہ متاثرہ صوبہ ہے جہاں اب تک 93 افراد لقمہ اجل بن چکے ہیں۔

وزیر اعظم عمران خان نے بدھ کو کورونا ریلیف فنڈ کے لیے منعقد کیے جانے والے ٹیلی تھون میں کہا کہ کورونا وائرس سے متاثرہ افراد کی شناخت کے لیے آئی ایس آئی کا نگرانی کا نظام استعمال کیا جا رہا ہے۔

وفاقی حکومت نے جمعے کو اعلان کیا ہے کہ کورونا وائرس کے بڑھتے خطرے کے پیش نظر ملک بھر میں لاک ڈاؤن نو مئی تک نافذ رہے گا۔

مزید :

علاقائی -سندھ -کراچی -کورونا وائرس -