شفافیت اولین ترجیح،سیاسی مداخلت اور اقربا پروری کا کوئی راستہ نہیں۔۔۔ڈاکٹر ثانیہ نشتر نے تنقید کرنے والوں کو کرارا جواب دے دیا

شفافیت اولین ترجیح،سیاسی مداخلت اور اقربا پروری کا کوئی راستہ نہیں۔۔۔ڈاکٹر ...
شفافیت اولین ترجیح،سیاسی مداخلت اور اقربا پروری کا کوئی راستہ نہیں۔۔۔ڈاکٹر ثانیہ نشتر نے تنقید کرنے والوں کو کرارا جواب دے دیا

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن  لائن) وزیر اعظم عمران خان کی معاون خصوصی ڈاکٹر ثانیہ نشتر نے کہا ہے کہ احساس ایمرجنسی کیش پروگرام میں سیاسی مداخلت اور اقربا پروری کا کوئی راستہ نہیں ہے، سماجی تحفظ کے اس پروگرام میں شفافیت ہماری اولین ترجیح ہے۔

تفصیلات کےمطابق وزیراعظم عمران خان کی معاون خصوصی ڈاکٹر ثانیہ نشتر نےمائیکروبلاگنگ ویب سائٹ پراحساس ایمرجنسی کیش انفارمیشن پورٹل کے سکرین شاٹس پوسٹ کرتےہوئےکہا کہ یہ شفافیت کےپیش نظر شائع کی جارہی ہیں۔اپنے ٹویٹ میں انہوں نے کہا کہ8171سکیم میں کیٹگری1اور 2 کی امداد 2010 کے سروے پر دی جا رہی ہے، 2010 میں شمالی اور جنوبی وزیر ستان میں امن عامہ نہ ہونے کی وجہ سے سروے نہیں ہوا تھا۔ڈاکٹر ثانیہ نشترکاکہناتھاکہ احساس ایمرجنسی کیش کی کیٹگری3میں وزیرستان کا حصہ آبادی کے لحاظ سے ہے، 8171 سکیم کے تحت شمالی وزیرستان سے 61 ہزار 164 اور جنوبی وزیرستان سے 62 ہزار 499 ایس ایم ایس موصول ہوئے ہیں جن کی جانچ پڑتال جاری ہے۔

انہوں نے کہا کہ کیٹگری3میں تمام صوبوں،گلگت بلتستان اور آزاد جموں و کشیر کا حصہ آبادی کے لحاظ سے رکھا گیا ہے اور مستحقین کی نشاندہی نادرا کے ڈیٹا اینالٹکس کے ذریعے کی جا رہی ہے۔معاون خصوصی کا کہنا تھا کہ کیٹگری 3 میں رقم کی ترسیل اگلے ہفتے شروع ہوگی، احساس ایمرجنسی کیش میں سیاسی مداخلت اور اقربا پروری کا کوئی راستہ نہیں ہے،سماجی تحفظ کے اس پروگرام میں شفافیت ہماری اولین ترجیح ہے۔

مزید :

قومی -