روس ‘نامعلوم افرادکا سابق صدر بورس یلسٹن کی یادگار کو نقصان

روس ‘نامعلوم افرادکا سابق صدر بورس یلسٹن کی یادگار کو نقصان

ماسکو (اے پی پی) روس میں نامعلوم افراد نے کئی یادگاروں کو نقصان پہنچایاہے۔ گزشتہ روز پولیس نے بتایا کہ نامعلوم افراد نے سابق سوویت صدر بورس یلسٹن کی یادگار کو نقصان پہنچایا۔ یادگار کے کتبے کونیلے رنگ سے رنگ دیا اور ان کے نام کی تختی کو اکھاڑ پھینکا۔ یلسٹن نے سوویت یونین کے کیمونسٹ رہنماﺅں کی تیز اصلاحات پر تنقید کر کے شہرت حاصل کی تھی۔ یلسٹن کی یادگار ایک لمبی پتھر کی سل پر ابھری ہوئی تصویر کنندہ ہے اس یادگار کا افتتاح 18 ماہ قبل اس وقت کے صدر دمتری میدویدوف نے یلسٹن کے آبائی علاقے میں کیا تھا۔ سرکاری ٹیلی ویژن نے حملہ آوروں کو علی الصبح یادگار پر حملہ کر کے اسے نقصان پہنچانے کی فٹیج دکھاتے ہوئے بتایا کہ اگر اس توڑ پھوڑ کے ملزم پکڑے گئے تو ان کو تین ماہ کی قید کی سزا ہو گی۔ بورس یلسٹن صدارتی مرکز کے ترجمان ویدم نومینکو نے آر آئی اے نیوز ایجنسی سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ توڑ پھوڑ کے عمل سے ہمیں شدید صدمہ پہنچا انہوں نے حکام سے اپیل کی کہ اس قسم کے واقعات کا اعادہ نہیں ہونا چاہئے

مزید : عالمی منظر