عالمی جوہری ادارے اور ایران میں ڈیل کی کوشش ناکام ہو گئی

عالمی جوہری ادارے اور ایران میں ڈیل کی کوشش ناکام ہو گئی

تہران (اے این این )بین الاقوامی جوہری توانائی ایجنسی کے چیف انسپیکٹر ہرمین نیکیرٹس کے مطابق جمعے کے روز ہونے والی بات چیت کے دوران ایران اور اقوام متحدہ کے درمیان اہم نکات پر اختلافات ختم نہیں کیے جا سکے اور اس باعث کوئی سمجھوتا ممکن نہیں ہو سکا۔ جمعے کے روز یورپی ملک آسٹریا کے دارالحکومت ویانا میں انٹرنیشنل اٹامک انرجی ایجنسی اور ایران کے درمیان سات گھنٹوں تک مذاکراتی عمل جاری رہا اور فریقین ایک دوسرے کو قائل کرنے سے قاصر رہے۔ چیف انسپیکٹر کا یہ بھی کہنا ہے کہ سردست ایران کے ساتھ مزید مذاکرات کے لیے کسی میٹنگ کا امکان موجود نہیں ہے۔بین الاقوامی جوہری ادارے میں ایران کے سفیر علی اصغر سلطانہ کا کہنا تھا کہ بات چیت کے دوران پیش رفت کے آثار پیدا ہوئے تھے لیکن اختلافات کو ختم نہیں کیا جا سکا۔ سلطانہ کا مزید کہنا تھا کہ یہ ایک انتہائی پیچیدہ معاملہ ہے اور ایران کی قومی سلامتی سے متعلق یہ معاملہ یقینی طور پر انتہائی حساس نوعیت کا ہے۔ ایرانی سفارت کار علی اصغر سلطانہ نے یہ بھی کہا کہ بات چیت کا عمل آگے ضرور بڑھا ہے اور سمجھوتے کے فریم ورک کو طے کر لیا جائے گا۔

مزید : عالمی منظر