سپریم کورٹ آزادانہ فیصلے کرے ،وکلاءبرادری ساتھ کھڑی ہے مہر حسن ایڈووکیٹ

سپریم کورٹ آزادانہ فیصلے کرے ،وکلاءبرادری ساتھ کھڑی ہے مہر حسن ایڈووکیٹ

لاہور (پ ر) احباب لائرز فورم کے نائب صدر مہر حسن محمود ایڈووکیٹ نے کہا ہے کہ سپریم کورٹ بلا ججھک اور آزادانہ فیصلے کرے وکلاءبرادری عالی عدلیہ کے شانہ بشانہ کھڑی ہے۔ جس نے سپریم کورٹ کو گرانے کی کوشش کی وکلاءاسی طرح نمٹیں گے جس طرح سابق آمر پرویز مشرف کے خلاف آہنی دیوار بن گئے تھے۔ ان کا کہنا تھا سپریم کورٹ نے سٹیل مل، رینٹل پاور منصوبوں، سیف سٹی منصوبہ، میمو گیٹ سکینڈل ،حج کرپشن سمیت کئی اہم کیسوں کا بروقت نوٹس لے کر نہ صرف اس میں ملوث ملکی مفادات کے خلاف کام کرنے والے چہروں کو عیاں کیا بلکہ ملکی خزانے کے اربوں روپے بچائے اور کرپٹ عناصر سے اربوں وصول کرا کے قومی خزانے میں جمع کرائے۔ مہر حسن کا کہنا تھا کہ آج کی آزاد عدلیہ حکمرانوں کو ایک آنکھ نہیں بھاتی کیونکہ اس طرح وہ کھل کر کرپشن اور اجارہ داری قائم نہیں کرسکتے۔ اس لئے حکمران طبقہ سپریم کورٹ کے خلاف سازشوں میں مصروف ہے ۔ کرپٹ طبقہ جتنی چالیں چل لے سپریم کورٹ اور وکلاءمتحد ہو کر اس کو ناکام بنا دیں گے۔ ان کا کہنا تھا کہ سپریم کورٹ عوام کے مفادات کیلئے فیصلے کررہی ہے اس لئے عوام کا فرض ہے کہ وہ عالی عدلیہ کے شانہ بشانہ کھڑی ہو جائے تاکہ ملک سے کرپٹ عناصر کا ہمیشہ ہمیشہ کیلئے خاتمہ ممکن ہو سکے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1