یوٹیلیٹی سٹور پر رمضان پیکج ختم،پٹرولیم مصنوعات کے نرخ آسمان پر مہنگائی کانیا طوفان آگیا

یوٹیلیٹی سٹور پر رمضان پیکج ختم،پٹرولیم مصنوعات کے نرخ آسمان پر مہنگائی ...

لاہور (وقائع نگار) رمضان بازاروں اور یوٹیلیٹی سٹوروں پر ماہ رمضان المبارک میں حکومت کی جانب سے دی جانے والی سبسڈی کے خاتمے کے بعد جہاں اشیائے خورو نوش کی قیمتیں واپس اپنی سطح پر آگئی ہیں وہیں پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ نے مہنگائی کا ایک اور طوفان برپا کردیا ہے جس کے پیش نظر اجناس، سبزیاں و پھل سمیت دیگراشیائے خورو نوش کی قیمتیں آسمان سے باتیں کرنا شروع ہوگئی ہیں۔ پاکستان رپورٹ کے مطابق ماہ رمضان کے اختتام کے بعد تاجروں نے اشیاءکی سپلائی نہ ہونے کو جواز بناکر قیمتوں میں ازخود اضافہ کردیا ہے جبکہ پرائس کنٹرول کمیٹیاں خاموش تماشائی بنے چشم پوشی اختیار کئے ہوئے ہیں۔ جن اشیاءکی قیمتوں میں اضافہ ہوا ان میں سبزیوں کی فی کلو قیمتوں میں 2 سے 11 فیصد پھلوں کی قیمتوں میں 4 سے 36 فیصد، اجناس کی قیمتوں میں 2 سے 8 فیصد اور مشروبات کی قیمتوں میں 10 فیصد تک اضافہ ہوا ہے۔ شہریوں نے آسمان سے باتیں کرتی مہنگائی کا ذمہ دار حکومت وقت کو ٹھہراتے ہوئے کہا ہے کہ حکومتی ناقص حکمت عملی کے باعث اشیائے خورو نوش کی قیمتوں میں آئے روز اضافہ غریب و سفید پوش شہریوںکے لئے زہر قاتل ثابت ہورہا ہے۔ حکمران ہوش کے ناخن لیں اور مہنگائی کے جن کو بوتل میں بند کرنے کے لئے اقدامات اٹھائیں۔ پرائس کنٹرول کمیٹی کے چیئرمین میاں اعجاز نے پاکستان سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ڈی سی او لاہور کے حکم پر پرائس کنٹرول کمیٹیوں نے چھاپہ مار ٹیمیں تشکیل دے کر عملی طور پر چیک اینڈ بیلنس کے نظام کو عملی جامہ پہنا رہے ہیں اور گرانفروشی کرنے والوں کے خلاف کریک ڈاﺅن جاری ہے۔

مزید : صفحہ آخر