نئے صنعتی گیس کنکشن پر پابندی ہٹانے کی درخواست کرینگے:چیئرمین اوگرا

نئے صنعتی گیس کنکشن پر پابندی ہٹانے کی درخواست کرینگے:چیئرمین اوگرا

لاہور (پ ر) چیئرمین آئل اینڈ گیس ریگولیٹری اتھارٹی (اوگرا) سعید احمد خان نے کہا ہے کہ اتھارٹی حکومت سے نئے صنعتی گیس کنکشن پر عائد پابندی ہٹانے کی درخواست کرے گی۔ وہ لاہور چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری میں اجلاس سے خطاب کررہے تھے۔ لاہور چیمبر کے قائم مقام صدر میاں طارق مصباح، نائب صدر کاشف انور، سابق صدور میاں محمد اشرف، افتخار علی ملک، میاں مصباح الرحمن، ایگزیکٹو کمیٹی اراکین خواجہ خاور رشید، طلحہ طیب بٹ، میاں زاہد جاوید، سابق سینئر نائب صدر یعقوب طاہر اظہار، سابق ایگزیکٹو کمیٹی ممبران رحمت اللہ جاوید، سید محمد عمیر اور شیخ محمد ایوب نے بھی اس موقع پر خطاب کیا۔ چیئرمین اوگرا نے کہا کہ پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں کے تعین کا طریقہ کار حکومت نے پہلے ہی وضع کررکھا ہے، اوگرا اس سلسلے میں حکومتی احکامات کی تعمیل کرتی ہے۔ پٹرولیم کی زیادہ قیمتیں ڈیوٹیوں اور ٹیکسوں کی وجہ سے ہیں۔

 گیس کی قلت پر بات کرتے ہوئے چیئرمین اوگرا نے کہا کہ قدرتی گیس سی این جی کے بجائے انڈسٹریل اور پاور جنریشن سیکٹرز کو دی جائے۔

پاکستان میں قدرتی گیس کے ذخائر آئندہ پچاس سال کی ضروریات پوری کرسکتے ہیں۔ لاہور چیمبر کے قائم مقام صدر میاں طارق مصباح نے اپنے خطاب میں کہا کہ پٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں عالمی سطح میں تیل کی قیمتوں اور ڈالر اور روپے کے ایکسچینج ریٹ کو مد نظر رکھ کر متعین کی جائیں۔ انہوں نے کہا کہ ماضی قریب میں روپے کی قدر مستحکم ہونے اور عالمی منڈی میں تیل کی قیمتیں کم ہونے کا فائدہ صارفین کو نہیں ملا۔ میاں طارق مصباح نے کہا کہ پاکستان میں پٹرولیم مصنوعات معیاری نہیں ، اوگرا کو چاہیے کہ تمام پٹرولیم مصنوعات کو ٹیسٹ کرنے کا سخت نظام وضع کرے تاکہ قومی وسائل کا ضیاع روکا جاسکے۔ انہوں نے ایس این جی پی ایل پر بھی زور دیا کہ وہ گیس کا ضیاع اور غیرضروری اخراجات روکنے کے لیے ٹھوس اقدامات اٹھائے۔ انہوں نے کہا کہ گیس کے نرخوں میں اضافے نے صنعتی شعبے اور گھریلو صارفین پر بھاری بوجھ ڈالا ہے جنہیں بجلی کی زیادہ قیمتوں کی وجہ سے پہلے ہی مسائل کا سامنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ گیس کی قیمتوں میں مزید اضافہ صارفین کے لیے پریشانی کا باعث بنے گا۔ انہوں نے کہا کہ اس وقت پبلک سروس وہیکلز میں ایل پی جی کے استعمال پر پابندی عائد ہے جسے ہٹایا جائے تاکہ سی این جی سیکٹر پر دباﺅ کم ہو اور ملک میں ایل پی جی آٹو سٹیشن قائم کیے جائیں۔ انہوں نے کہا کہ اس وقت مارکیٹ میں غیرمعیاری ایل پی جی سلنڈرز فروخت ہورہے ہیں جن کی وجہ سے حادثات رونما ہونے کا خدشہ بڑھ گیا ہے۔ اوگرا اس معاملے پر خاص توجہ دے اور مارکیٹ میں غیرمعیاری سلنڈروں کی فروخت فوری طور پر روکی جائے۔ انہوں نے اوگرا چیئرمین پر زور دیا کہ وہ اوگرا کی عوامی سنوائی ہوٹل کے بجائے متعلق چیمبر میں منعقد کیا کرے تاکہ اس میں ایوان ہائے صنعت و تجارت کی نمائندگی یقینی بنائی جاسکے۔

مزید : کامرس