روئی کی قیمتوں میں اضافہ، بھاﺅ 5650 روپے من تک پہنچ گئے

روئی کی قیمتوں میں اضافہ، بھاﺅ 5650 روپے من تک پہنچ گئے

کراچی(آن لائن)امریکا میں کپاس پیدا کرنے والے علاقوں میں خشک سالی کی اطلاعات، وسیع پیمانے پرکاٹن کے برآمدی آرڈرز دوبارہ موصول ہونے پرامریکی کاٹن مارکیٹس میں گزشتہ ہفتے رونما ہونے والی تیزی کے اثرات پاکستانی کاٹن مارکیٹس پر بھی مرتب ہوئے اور ہفتہ وار کاروبار کے دوران روئی کی قیمتوں میں نمایاں تیزی ریکارڈ کی گئی۔اس رحجان کو دیکھتے ہوئے کاٹن کے بیوپاری کو توقع ہے کہ رواں ہفتے بھی بین الاقوامی اور مقامی سطح پرروئی کی قیمتوں میں تیزی کا تسلسل قائم رہے گا۔ ممبر کاٹن جنرز ایسوسی ایشن (پی سی جی اے) احسان الحق نے نجی ٹی وی کو بتایا کہ نیویارک کاٹن ایکس چینج بھی امریکی اور پاکستانی کاٹن مارکیٹس میں رونما ہونے تیزی کے زیراثر رہی جس کی وجہ سے نیویارک کاٹن ایکس چینج میں گزشتہ ہفتے اکتوبروعدہ پر روئی کے سودے گزشتہ 5 ماہ کی بلند ترین سطح پر کیے گئے اور اس رحجان سے روئی کے عالمی سرمایہ کاروں میں گزشتہ کچھ عرصے پائی جانیوالی اضطرابی کیفیت کو ختم کرنے میں اہم کردار ادا کیا۔روئی کی قیمت وتجارتی سرگرمیوں کے نئے رحجان کو مدنظررکھتے ہوئے توقع ہے کہ عالمی سرمایہ کار ایک پھربار متحرک ہوکرروئی کے کاروبارمیں اپنی سرمایہ کاری کے حجم میں اضافہ کریں گے۔

 انہوں نے بتایا کہ گزشتہ ہفتے نیویارک کاٹن ایکس چینج میں حاضر ڈلیوری روئی کے سودے 0.80 سینٹ فی پاو¿نڈ اضافے کے ساتھ 74.90 سینٹ فی پاو¿نڈ جبکہ اکتوبر ڈلیوری روئی کے سودے ریکارڈ 3.86 سینٹ (6.07 فیصد) اضافے کے ساتھ پچھلے 5 ماہ کی بلند ترین سطح 67.46 سینٹ فی پاو¿نڈ تک پہنچ گئے جبکہ پاکستان میں روئی کی قیمتیں تقریباً 100 روپے اضافے کے ساتھ پنجاب میں 5 ہزار 650 روپے جبکہ سندھ میں 5 ہزار 550 روپے فی من تک پہنچ گئے جبکہ کراچی کاٹن ایسوسی ایشن میں روئی کے اسپاٹ ریٹ 50 روپے فی من اضافے کے ساتھ 5 ہزار 450 روپے فی من تک پہنچ گئے

مزید : کامرس