عمران خان اور طاہر القادری ناکام دھرنوں کے بعد تیسری قوت کے منتظر ہیں،عبدالستار حامد

عمران خان اور طاہر القادری ناکام دھرنوں کے بعد تیسری قوت کے منتظر ...

 لاہور(پ ر)مرکزی جمعیت اہل حدیث پنجاب نے عمران خان اور طاہر القادری کے دھرنوں میں فحاشی وعریانی کی شدید مذمت کرتے ہوئے قوم کا وقت اور پیسہ ضائع کرنے پر معافی مانگنے اور دھرنا ختم کرنے کا مطالبہ کر دیا ہے اور حکومت سے کہا ہے کہ پاکستان کو سیاسی ومعاشی عدم استحکام کا شکار کرنے والے عناصر کے ساتھ سختی سے نمٹا جائے مرکزی جمعیت اہل حدیث پنجاب کے امیر پروفیسر حافظ عبد الستار حامد صاحب کی زیر صدارت منعقدہ پنجاب کابینہ وعاملہ کے اجلاس میں علمائے اہل حدیث نے کہا کہ ناکام ترین دھرنے کے بعد اب عمران خان اور طاہر القادری کسی تیسری قوت کے منتظر ہیں انہیں یاد رکھنا چاہیے کہ جمہوریت میں تھرڈ ایمپائر عوام ہوتے ہیں اور عوام کے پاس ابھی 4 سال کا عرصہ ہے حکومت کی کارکردگی کو جانچنے کا پروفیسر عبد الستار حامد‘ ڈاکٹر عبد الغفور راشد‘ میاں محمود عباس‘ مولانا مبشر احمد مدنی‘ حافظ عبد الرزاق اور دیگر نے کہا کہ دھرنوں کے ذریعے یہودی سرمایہ کے بل بوتے پر رقص وسرور کی محفلیں سجا کر پاکستان کے کلچر کو تبدیل کرنے کی سازش کامیاب نہیں ہونے دیں گے اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ مرکزی جمعیت اہل حدیث پاکستان کے قائد علامہ ساجد میر کے حکم پر استحکام پاکستان ریلیوں کا پنجاب بھر میں انعقاد کریں گے علمائے اہل حدیث نے کہا کہ عمران اور قادری میں جھوٹ بولنے کا مقابلہ ہو رہا ہے عمران خان نے خود کو سیاسی نابالغ ثابت کیا ہے عمران خان کو سیاست چھوڑ کر اب ہسپتال پر توجہ دینی چاہیے اجلاس میں ایک قرار داد کے ذریعے دھرنوں میں فحاشی وعریانی کی شدید مذمت کی گئی قاری محمد حنیف بھٹی‘ مولانا بہادر علی‘ قاری عزیر‘ مفتی کفایت اللہ شاکر‘ قاری سیف اللہ عابد‘ قاری عبد الغنی ثاقب‘ میاں عبد الغفار‘ مولانا عبد الغفور طاہر‘ پروفیسر سعید کلیروی‘ قاری عبد المتین اصغر‘ مولانا محمد ارشد بیگم کوٹی‘ حافظ عبدالغفار بمبانوالے‘ مولانا عارف اثری‘ قاری ثناءاللہ شاہد قصوری‘ حکیم سلیمان اظہر‘ مولانا بشیر بشر‘ مولانا عبد الواحد سلفی‘ ملک سلمان‘ محمد ارشد سیٹھی‘ ڈاکٹر حافظ محمد یونس ودیگر نے شرکت کی۔

مزید : میٹروپولیٹن 1