سرکاری کالجوں میں ناکامی سیٹوں کے باعث ہزاروں طلبہ داخلوں سے محروم

سرکاری کالجوں میں ناکامی سیٹوں کے باعث ہزاروں طلبہ داخلوں سے محروم ...

         لاہور(ایجوکیشن رپورٹر) سرکاری کالجوں میں تعلیم حاصل کرنے کے ہزاروں طلباءکے خواب آج چکنا چور ہونگے،انٹرمیڈیٹ میں داخلہ لینے والے خوش قسمت امیدواروں کی حتمی میرٹ لسٹیں آج لگیں گی محکمہ ہائر ایجوکیشن کی لاہور سمیت پنجاب بھر کے سرکاری کالجز میں عدم دلچسپی کے باعث ہزاراوں متوسط طبقے سے تعلق رکھنے والے بچوں کا مستقبل تاریک کر دیا عرصہ دراز سے ناکافی سیٹوں اور میرٹ زیادہ ہو نے کے باعث لاہور کے سرکاری کالجز میںانٹر میڈیٹ میں داخلوں سے محروم رہ جاتے ہیں صوبائی دارالحکومت کے47 پبلک کالجز میں25ہزار سیٹوں پر پاس ہونے والے 124343 طلبہ کی اکثریت داخلے کی خواہش کے باوجود نجی کالجز کارخ کرنے پر مجبور ہو چکے ہیں جبکہ نجی کالجز میںفیس ادا نہ کرنے والے طلبہ کی ایک بڑی تعداد اعلیٰ تعلیم سے محروم ہونے کا خدشہ ہے۔ میٹرک کے سالانہ امتحانات 2014ءکے رزلٹ کے بعد پنجاب کے تمام سرکاری و نجی کالجز میں داخلوں کا سلسلہ میٹرک کے سالانہ نتائج کے بعد شروع ہوا،میٹرک کے امتحانات میں کامیابی حاصل کرنے والے طلباءکی تعداد سرکاری کالجوں میں انٹرمیڈیٹ کی سیٹوں سے کئی گنا زیادہ ہے لاہور بورڈ کے مطابق 124343طلبہ نے میٹرک کا امتحان پاس کیا ہے جبکہ ڈسٹرکٹ لاہور کے اندر سرکاری کالجز کی تعداد 47ہے جن میں17بوائے کالجز اور30خواتین کالجز ہیں ان سرکاری کالجز میں صرف25ہزار طلبہ کی سیٹیں موجود ہیں ان سیٹوں کے برعکس لاہور بورڈ میںگریڈ اے پلس کی تعداد 13ہزار357بنتی ہے اور ان اچھے نمبرز حاصل کرنے والوں کے لئے بھی سرکاری کالجز کے اندر سیٹیں موجود نہیں ہیں لاہور ڈویژن کے اندر جس میں ننکانہ صاحب، شیخوپورہ، قصور اور ڈسٹرکٹ لاہور شامل ہے میں سرکاری کالجز کی تعداد89بتائی جاتی ہے اور ان کالجز سے اے اور اے پلس گریڈ کے طلبہ کی شدید خواہش ہوتی ہے کہ وہ لاہور کے سرکاری تعلیمی اداروں میں تعلیم حاصل کریں اور اس طرح مذکورہ شہر تو دور کی بات پنجاب بھر کے نو تعلیمی بورڈز کے بچوں کی خواہش ےہی ہوتی ہے کہ وہ بھی لاہور کے اعلیٰ تعلیمی اداروں میں تعلیم حاصل کریں مگر مذکورہ سیٹوں کی تعداد سے طلبہ ماےوس نظر آرہے ہیں نجی کالجز نے بھاری آفروں کے ساتھ پوزیشن ہولڈرز اوراچھے نمبرز حاصل کرنے والے طلبہ کو پریشان کردیا ہے انہوں نے80فیصد نمبرز لینے والوں کو فری70فیصد نمبرز لینے والوں کو50فیصد رعایت کرنے کی آفرز کے اشتہارات بھی دے دیئے ہیں اور اب کم نمبرز حاصل کرنے والے اور نجی کالجز میںفیس ادا نہ کرسکنے والے طلبہ شدید پریشان نظر آرہے ہیں ایسے طلبہ کی تعداد بھی ہزاروں میں بتائی جاتی ہے جبکہ کم نمبروں سے پاس ہونے والے امیدواروں کی مجبوری کا فائدہ اٹھانے والے نجی تعلیمی اداروں نے اشتہار بازی کی بھر مار رکھی ہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 4