کسی حاجی سے 30کلو گرام تک سامان کا کوئی کرایہ وصول نہیں کیا جائے گا

کسی حاجی سے 30کلو گرام تک سامان کا کوئی کرایہ وصول نہیں کیا جائے گا


لاہور(ڈویلپمنٹ سیل) سعودی عرب میں منشیات لے کر جانے کی سزا موت ہے‘ عازمین حج کو کسی قسم کی کھانے پینے کی اشیاء مثلاآٹا‘ چینی ‘گھی ‘ستو‘اسپغول‘ چورن ‘پھکی وغیرہ اور روزمرہ استعمال کی دیگر چیزیں مثلا صابن ‘ٹوتھ پیسٹ ‘ شیمپو‘ پاؤڈر‘پرفیوم ‘ تیل‘ جوشاندہ اور سگریٹ وغیرہ بھی ساتھ لے جانے کی اجازت نہیں۔صرف مستند ڈاکٹر کی نسخے کے ہمراہ سیل بند برانڈڈ ادویات ساتھ لے جائی جا سکتی ہیں۔عازمین حج چہل قدمی اور ہلکی ورزش کو اپنا معمول بنائیں‘حج کا طریقہ ‘مسائل اور دعائیں یاد کر لیں ۔ حجاج کرام راستہ بھولنے اور دیگر مشکلات سے بچنے کے لئے وزارت مذہبی امور کی طرف سے مہیا کیا جانے والا شناختی کارڈ ہر وقت گلے میں ڈالے رکھیں۔وزارت مذہبی امور کے ذرائع کے مطابق کسی حاجی سے 30کلو گرام تک سامان کا کوئی کرایہ وصول نہیں کیا جائے گا ‘ چنانچہ حجاج کرام صرف ضرورت مطابق سامان ہی اپنے ہمراہ لیجائیں۔ تمام حجاج کرام کے پاسپورٹ پر متعلقہ حاجی کا فلائٹ نمبراور مکہ اور مدینہ میں رہائشی عمارت کا کوڈ نمبر درج کیا جائے گا۔عازمین حج اپنی روانگی فلائٹ کے وقت سے کم از کم چھے گھنٹے پہلے لازمی طور پر ائر پورٹ پہنچ جائیں۔ عازمین حج کو گردن توڑ بخار اور انفلوئنزا کے ٹیکے لگانے کا کام شروع کر دیاگیا ہے ‘سعودی حکومت کی ہدایات کے مطابق عازمین حج کو پولیو کے قطرے بھی پلائے جائیں گے ۔ متعلقہ محکموں کے تعاون سے ائیر پورٹوں پر عازمین حج کی سہولت کے تمام ضروری اقدامات کئے جا رہے ہیں۔ ان کیلئے احرام باندھنے سے قبل وضو کرنے اور نماز ادا کرنے کے لئے ضر وری انتظامات کے علاوہ پینے کے پانی کی فراہمی وغیرہ کا بندوبست بھی کیا جا رہا ہے ۔

کرایہ

مزید : صفحہ آخر