وزیراعظم سے استعفے کا مطالبہ آئین کے منافی ہے، تنویر اشرف کائرہ

وزیراعظم سے استعفے کا مطالبہ آئین کے منافی ہے، تنویر اشرف کائرہ


لاہور( نمائندہ خصوصی) پاکستان پیپلز پارٹی پنجاب کے سیکرٹری جنرل تنویر اشرف کائرہ نے کہا ہے کہ احتجاج کرنیوالی جماعتوں کا وزیراعظم سے مشروط یا کسی اور شکل میں استعفیٰ کا مطالبہ آئین کے منافی ہے صرف الزامات کی بنیاد پر وزیراعظم سے استعفیٰ کا مطالبہ کرنا ملک میں ایک ایسی غلط روایت ڈالے گا جس سے ملک میں سیاسی استحکام ایک خواب بن کر رہ جائے گا۔ تنویر اشرف کائرہ نے پی ٹی آئی اور پاکستان عوامی تحریک کے استعفیٰ کے مطالبے کو انصاف کے تقاضوں کے منافی قرار دیتے ہوئے کہا کہ یہ دونوں جماعتیں خود ہی مدعی، جیوری اور فیصلوں پر عمل درآمد کرنے کا کردار ادا کرنا چاہتی ہیں ایسا مہذب معاشروں میں نہیں ہوتا۔ انہوں نے حکومت اور احتجاج کرنیوالی جماعتوں پر زور دیا کہ وہ تحمل، رواداری اور سمجھداری کا ثبوت دیتے ہوئے موجودہ سیاسی بحران کو مذاکرات کے ذریعے حل کریں اور سب سے پہلے انتخابی دھاندلی کی تحقیقات کو کسی منطقی نتیجے پر پہنچائیں کیونکہ الزامات سنگین ہیں۔ تنویر اشرف کائرہ نے کہا کہ موجودہ وزیراعظم کی قسمت کا فیصلہ انتخابی دھاندلی کی تحقیقات کے نتائج پر چھوڑ دینا چاہیے۔ وزیراعظم کو اس سے قبل استعفیٰ پر مجبور کرنا مناسب نہیں ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی کو بھی مئی 2013 ؁ء کے انتخابات پر شدید تحفظات تھے لیکن پارٹی کی قیادت نے ملک میں جمہوریت کے تسلسل کی خاطر انکو تسلیم کیا۔ تنویر اشرف کائرہ نے انتخابی عمل میں دوررس اصلاحات لانے کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے پارلیمانی کمیٹی برائے انتخابی عمل پر مطالبہ کیا کہ وہ اس عمل کو اولین ترجیح دیں کیونکہ یہ ایک قومی مطالبہ بن گیا ہے۔

تنویر اشرف کائرہ

مزید : صفحہ آخر