بد ترین سیاسی صورتحال، سٹاک مارکیٹ کو مستحکم رکھنے کی کوششیں ناکام

بد ترین سیاسی صورتحال، سٹاک مارکیٹ کو مستحکم رکھنے کی کوششیں ناکام


لاہور(کامرس رپورٹر)ملک میں جاری تاریخ کی بد ترین سیاسی کشمکش و ہلچل نے سرکاری مالیاتی اداروں کی سٹاک مارکیٹ کو مستحکم رکھنے کی تمام تر کوششوں پر پانی پھیر دیا ۔ سرکاری مالیاتی ادارے سرمایہ کاروں کا اعتماد بحال کرنے میں ناکام ہو گئے ۔ سرمایہ کاروں نے ملک کے آئندہ کے حالات سے خوف زدہ ہو کر مارکیٹ سے اپنا سرمایہ نکالنا شروع کر دیا ۔ سرمایہ کاروں کی جانب سے بڑے پیمانے پر حصص کی فروخت کے باعث کراچی مارکیٹ شدید مندے کا شکار ہو گئی ۔ مندے کے باعث سرمایہ کاروں کے اربوں روپے ڈوب گئے ۔ گزشتہ روز کراچی مارکیٹ میں ٹریڈنگ کے آغاز ہی مندے سے ہوا ۔ مندے کو دیکھ کر سرمایہ کاروں نے حصص کی مزید فروخت شروع کر دی ۔ ایک موقع پر مارکیٹ کا انڈیکس ساڑھے چار سو پوائنٹس تک گر گیا تاہم ٹریڈنگ کے اختتام سے کچھ دیر قبل مارکیٹ میں چند سرمایہ کاروں نے حصص کی گری ہوئی قیمتوں کا فائدہ اٹھانے کے لئے سرمایہ کاری کی جس سے انڈیکس میں ایک سو پوائنٹس تک کا اضافہ ہوا ۔ ٹریڈنگ کے اختتام پر کے ای ایس سی 100 انڈیکس 352.41 پوائنٹس کی کمی سے 28519.34 پوائنٹس پر بند ہوا ۔ ایک موقع پر انڈیکس کم ہو کر 28436.21 پوائنٹس تک آ گیا ۔

ناکام

مزید : صفحہ آخر