گجرات ،امریکن نژاد پاکستانی شہری شکیل نے دو بیٹوں کو قتل کر کے خود کشی کر لی

گجرات ،امریکن نژاد پاکستانی شہری شکیل نے دو بیٹوں کو قتل کر کے خود کشی کر لی ...

                                         گجرات (بیورورپورٹ) گجرات کے پوش علاقے شادمان کالونی میں ڈاکٹر شیرازی کے گھر ان کے ماموں امریکن نژاد پاکستانی شہری شکیل احمد جو سابق وفاقی وزیر قانون ایس اے حمید کے چھوٹے بھائی ہیں نے اپنے دو بیٹوں کو قتل کرنے کے بعد خود کشی کر لی ابتدائی معلومات کے مطابق شکیل احمد امریکا میں گاڑیوں کی خریدو فروخت کا کاروبار کرتا تھا 2007میں اسکی اہلیہ جو پیشہ کے اعتبار سے ڈاکٹر تھی کینسر کے مرض کا شکار ہو کر وفات پا گئی اپنی اہلیہ کی وفات پر وہ سخت دلبرداشتہ ہوا اور اپنے بیٹوں ازیر اور عمیر کو اس نے پاکستان منتقل کر دیا تاکہ وہ اپنی تعلیم جاری رکھ سکے چند یوم قبل شکیل احمد وطن واپس آیا جبکہ اسکے بیٹے ازیر اور عمیر اپنے والدکے بھانجے ڈاکٹر شیرازی کے گھر آ گئے اور چھٹیاں گزارنے لگے چار یوم قبل شکیل احمد بیٹوں کو لینے گجرات پہنچا اور اسکا یہ ارادہ تھا چونکہ اب سکول کھل چکے ہیں لہذا وہ اب بچوں کو لاہور چھوڑ آئے گزشتہ روز ساڑھے گیارہ بجے کے قریب وہ اپنے بیڈ روم میں سوئے ہوئے تھے کہ مبینہ طور پر شکیل احمد نے اپنے بڑے بیٹے کو گولی مار دی اور بعد میں چھوٹے بیٹے کو گولی مار کر ہلاک کر دیا دونوں کو ہلاک کرنے کے ڈیڑھ گھنٹہ بعد وہ خود بھی چار پائی پر لیٹ گیا اور اپنے سر میں گولی مار کر خود کشی کر لی ڈی پی او رائے اعجاز احمد اور دیگر اعلی پولیس افسران واقعہ کی اطلاع ملتے ہی موقع پر پہنچ گئے پولیس نے تینوں نعشوں کو پوسٹ مارٹم کے لیے ہسپتال منتقل کر دیا ہے پولیس نے مختلف پہلوﺅں پر تفتیش شروع کر دی ہے جبکہ گھریلو ملازمین کو بھی پولیس نے گرفتار کر کے شامل تفتیش کر لیا ہے پولیس مختلف امور پر تفتیش کر رہی ہے کہ کیا ان بچوں کو مارنے سے قبل بے ہوش کیا گیا تھا شکیل احمد نے کتنی جائیداد ورثے میں چھوڑا ہے اور اسکا کسی کے ساتھ کوئی تنازعہ تو نہ تھا یہ سارے شکوک وشبہات انکے بیڈ روم کا دروازہ کھلا ہونے کی وجہ سے پیدا ہوئے ہیں ۔

مزید : علاقائی