نائیجیریا کے سینکڑوں فوجی کیمرون فرار

نائیجیریا کے سینکڑوں فوجی کیمرون فرار
نائیجیریا کے سینکڑوں فوجی کیمرون فرار

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

 یاونڈے (ویب ڈیسک) نائیجیریا کے تقریباً 500 فوجی اسلام پسند جنگجو گروہ بوکو حرام کے ساتھ شدید لڑائی کے بعد فرار ہو کر کیمرون میں داخل ہو چکے ہیں، جنگجوگروہ نے قصبے کے روایتی حکمران کے محل پر امیر گووزا کے نام کے پرچم لگا دیے ہیں۔کیمرون کی فوج کے ترجمان لیفٹیننٹ کرنل دیدئر باجیک کا کہنا تھا کہ 480 مفرور فوجیوں کو غیر مسلح کر دیا گیا ہے اور انھیں ایک سکول میں رہائش دے دی گئی ہے،شمال مشرقی نائیجیریا میں سرحدی قصبے گمبورو نگالا میں ابھی بھی لڑائی ہو رہی ہے۔ نائیجیریا کی حکومت نے 2003 ءمیں اپنی تین شمال مشرقی ریاستوں میں ایمرجنسی نافذ کر دی تھی ، لیکن علاقے میں ہزاروں فوجیوں کی تعیناتی کے باوجودگزشتہ چند ماہ کے دوران یہاں نہ صرف مزاحمت جاری رہی ہے بلکہ اس میں شدت آ چکی ہے۔ پچھلے ہفتے فوجیوں کے ایک گروہ نے بوکوحرام کےخلاف لڑنے کے احکامات ماننے سے انکار کر دیا تھا۔ ان فوجیوں کا کہنا تھا کہ بوکو حرام کے شدت پسندوں کے پاس ان سے بہتر اسلحہ ہے۔ کیمرون کی فوج کے ترجمان کا مزید کہنا تھا کہ فرار ہونےوالے فوجی اب نائیجیریا کی سرحد سے 50 میل دور مارووا نامی قصبے میں پہنچ چکے ہیں۔یاد رہے کہ بوکو حرام نے اپنی پر تشدد کارروائیوں کا آغاز 2009 ءمیں کیا تھا اور اب تک شمال مشرقی نائیجیریا میں ہزاروں لوگوں کو ان کارروائیوں میں ہلاک کیا جا چکا ہے۔

مزید : بین الاقوامی